کس طرح خدا کی فرمانروائی اور بنی نوع انسان کی آزادمرضی کے کام نجات میں مل کر کام کرتے ہیں؟



سوال: کس طرح خدا کی فرمانروائی اور بنی نوع انسان کی آزادمرضی کے کام نجات میں مل کر کام کرتے ہیں؟

جواب:
خدا کی فرمانروائی اور انسانیت کی آزاد مرضی اور ذمہ داری کے درمیان جو بنا ہؤا ہے اس کے مکمل طور سے سمجھنا ہمارے لئے ناممکن ہے۔ صرف خدا ہی مکمل طور سے جانتا ہے کہ یہ دونوں کس طرح کی خدا کی نجات کے منصوبہ میں ہوکر کام کرتے ہیں۔ غالباً کسی اور علم الہی سے زیادہ اس معاملہ کے ساتھ قطعی طور سے ہماری ناقابلیت کو ماننا ضروری ہوجاتا ہے کہ ہم خدا کی فطرت اور اسے کے ساتھ کے رشتہ کو پوری طرح سمجھ لیں یا اسے پکڑلے کی کوشش کریں۔ کسی ایک کی طرف بہت دور (گہرائی) میں جانے پر بھی نجات کی سمجھ غلط بیانی کا نتیجہ ہی ہاتھ لگتا ہے۔

خدا کا کلام صاف طور سے بیان کرتا ہے کہ صرف خدا جانتا ہے کہ کون بچایا جائیگا (رومیوں 8:29؛ 1پطرس 1:2)۔ افسیوں 1:4 ہم سے کہتا ہے کہ خدا نے ہمکو "بنا ہی عالم سے پیشتر" چن لیا۔ کلام پاک بار بار یہ بیان کرتا ہے کہ ایماندار لوگ "برگزیدہ" لوگ ہیں یعنی کہ "چنے ہوئےلوگ" (رومیوں 8:33 ؛ 11:5 ؛ افسیوں 1:11 ؛ کلسیوں 3:12 ؛ 1 تھسلنیکیوں 1:14 ؛ 1پطرس 1:2 ؛ 2:9 ؛ متی 24:22،31 مرقس 13:20،27 ؛ رومیوں 11:7 ؛ 2 تموتھیس 2:10؛ ططس 1:1) سچائی یہ ہے کہ ایماندار لوگوں کو خدا کے پاک ارادہ میں پہلے ہی سے شامل کرلیا گیا۔ (رومیوں30- 8:29؛ افسیوں 1:5،11) اور انہیں نجات کے لئے چن لیا گیا ہے جوکہ بالکل صاف ہے۔ (رومیوں 9:11 ؛ 11:28 ؛ 2 پطرس 1:10)۔

پاک کلام یہ بھی کہتا ہے کہ یسوع مسیح کو نجات دہندہ بطور قبول کرنے ہم ذمہ دار ہیں۔ ہمیں جو کرنا ہے وہ یہ ہے کہ مسیح یسوع پر ایمان لانا ہے تب ہم بچائے جائینگے۔ (یوحنا 3:16 ؛ رومیوں10- 10:9)۔ خدا جانتا ہے کہ کون بچایا جائیگا، خدا چنتا ہے کہ کون بچایاجائیگا اور ہمیں مسیح کو چننے کی ضرورت ہے کہ بچائے جائیں۔ یہ تینوں سچائياں کس طرح مل کر کام کرتی ہیں اسے سمجھنا ایک محدود عقل رکھنے والے کے لئے ناممکن ہے۔ (رومیوں-36 11:33)۔ ہماری ذمہ داری یہ ہے کہ انجیل کے پیغام کو پوری دنیا چنا جاتا ہے 28:18-20) .مت ;1:8 اعمال)۔ اور تقدیر یا قسمت یا باتیں خدا کے حصے میں ہیں اسے ہمیں خدا پر چھوڑنا ہوگا اور ہمیں سادگی سے انجیل کو سنانے میں وفادار رہنا ہوگا۔



اردو ہوم پیج میں واپسی



؟ کس طرح ہم روُح القدس حاصل کرتے ہیں