خُدا نے ہمیں کیوں تخلیق کیا؟


سوال: خُدا نے ہمیں کیوں تخلیق کیا؟

جواب:
"خُدا نے ہمیں کیوں تخلیق کیا" اِس سوال کا مختصر جواب ہے "اپنی خوشی کے لئے"۔ مکاشفہ 4:11 بیان کرتی ہے، "اے ہمارے خُداوند اور خُدا تُو ہی تمجید اور عزت اور قدرت کے لائق ہے کیونکہ تُو ہی نے سب چیزیں پیدا کیں اور وہ تیری ہی مرضی سے تھیں اور پیدا ہُوئیں"۔ کُلسیوں 1:16 بھی اِس نقطہ کی تصدیق کرتی ہے، "کیونکہ اُسی میں سب چیزیں پیدا کی گئیں۔ آسمان کی ہوں یا زمین کی۔ دیکھی ہوں یا اَن دیکھی۔ تخت ہوں یا ریاستیں یا حکومتیں یا اختیارات۔ سب چیزیں اُس کے وسیلہ سے اور اُسی کے واسطے پیدا ہوئی ہیں"۔ خُدا کی خوشی کے لئے پیدا ہونے کا مطلب یہ نہیں کہ انسان کو خُدا کی تفریح کے طور پر خلق کیا گیا ہے۔ خُدا خلق کرنے والا ہے، اور تخلیق کرنے سے اُسے خوشی ملتی ہے۔ خُدا ایک شخصیت ہے، اور دوسری مخلوقات سے تعلقات قائم کر کے اُسے خوشی حاصل ہوتی ہے۔

خُدا کی صورت و شبیہ پر پیدا ہونے کی بدولت (پیدائش 1:27)، انسان کے پاس خُدا کو جاننے کی قابلیت ہے اور اِس لئے اُس سے محبت کرتا ہے، اُس کی پرستش کرتا ہے، اُس کی خدمت کرتا ہے، اور اُس کی رفاقت میں رہتا ہے۔ خُدا نے انسان کو اِس لئے نہیں پیدا کیا کہ اُسے انسان کی ضرورت ہے۔ خُدا کے طور پر، اُسے کسی کی بھی ضرورت نہیں ہے۔ ازل میں اُس نے کوئی تنہائی محسوس نہیں کی، لہذہ وہ کسی دوست کی تلاش میں نہیں تھا۔ وہ ہم سے پیار کرتا ہے، لیکن پیار کرنے کا ہرگز مطلب نہیں کہ اُسے ہماری ضرورت ہے۔ اگر ہم نہ بھی ہوتے تو بھی خُدا خُدا ہی ہوتا جو لاتبدیل ہے (ملاکی 3:6)۔ میں ہوں (خروج 3:14) خود اپنے ابدی وجود سے کبھی غیر مطمئن نہیں تھا۔ جب اُس نے کائنات کو بنایا، اُس نے وہی کیا جس سے اُسے خوشی حاصل ہوئی، اور چونکہ خُدا کامل ہے، اِس لئے اُس کا فعل بھی کامل تھا، "بہت اچھا تھا" (پیدائش 1:31)۔

اِس کے علاوہ، خُدا نے "ہم رُتبہ" تخلیق نہیں کئے یا ایسی مخلوق نہیں بنائی جو اُسے کے برابر ہو۔ منطقی طور پر، وہ ایسا کر بھی نہیں سکتا تھا۔ اگر خُدا برابر قدرت، دانش، اور کاملیت، کی کوئی اور مخلوق بھی تخلیق کرتا، تو پھر اِس سادہ سی وجہ کی بنا پر وہ واحد حقیقی خُدا نہ رہتا، کیونکہ پھر دو خُدا ہوتے، اور یہ ناممکن بات ہوتی۔ "خُداوند ہی خُدا ہے اور اُس کے سِوا اور کوئی ہے ہی نہیں" (اِستثنا 4:35)۔ جو کچھ خُدا تخلیق کرتا ہے اُس کا خود خُدا سے کم ضروری ہونا لازم ہے۔ جو چیزبنائی جاتی ہے وہ اپنے بنانے والے سے کبھی بڑی نہیں ہو سکتی۔

خُدا کی مکمل حاکمیت اور پاکیزگی کو تسلیم کرتے ہوئے، ہم حیران ہیں کہ وہ انسان کو لے کر اُسے "جلال اور عزت کے ساتھ" تاجدار کرے گا (زبور 8:5) اور وہ ہمیں اپنے دوست بنانے کے لئے جھکے گا (یوحنا 15:14-15)۔ خُدا نے ہمیں کیوں خلق کیا؟ خُدا نے ہمیں اپنی خوشی کے لئے خلق کیا اور تاکہ ہم اُس کی تخلیق کے طور پر اُسے جاننے کی خوشی حاصل کر پائیں۔

English
اردو ہوم پیج میں واپسی
خُدا نے ہمیں کیوں تخلیق کیا؟