ہمیں بائبل پڑھنے کا آغاز کہاں سے کرنا چاہیے؟


سوال: ہمیں بائبل پڑھنے کا آغاز کہاں سے کرنا چاہیے؟

جواب:
شروع کرنے کے لئے یہ جان لینا ضروری ہے کہ بائبل ایک عام کتاب نہیں ہے جِسے یکسانیت کے ساتھ صفحہ بہ صفحہ پڑا جائے۔یہ کتابوں کا مجموعہ ہے یا ایک لائبریری ہے جِسے مختلف مصنفین نے 1500سال سے زیادہ عرصہ میں کئی زبانوں میں لکھا۔ مارٹن لوتھر نے کہا کہ بائبل "مسیح کا جھولا" ہے کیونکہ بائبل کی ساری تواریخ اور نبوتیں آخر کار ایک ہی نقطہ مسیح پر آتی ہیں۔ اِس لئے بائبل پڑھنے کا آغاز اناجیل سے کرنا چاہیے۔ مرقس کی انجیل جلد اور تیز رفتار پڑھی جانے والی انجیل ہے اورپڑھنے کے آغاز کے لئے بہترین کتاب ہے۔ پھر آپ یوحنا کی انجیل پڑھ سکتے ہیں، جو اُن باتوں پر توجہ دیتی ہے جس کا مسیح نے اپنے بارے میں دعویٰ کیا تھا۔ مرقس یسوع کے بارے میں وہ بتاتا ہے جو اُس نے کِیا، جبکہ یوحنا یسوع کے بارے میں وہ بتاتا ہے جو اُس نے کہا اور جو وہ خود تھا۔ یوحنا کی انجیل میں کچھ حوالہ جات بہت سادہ اور واضح ہیں، لیکن اِ س میں بہت گہرے اور مشہور حوالہ جات بھی موجود ہیں۔ اناجیل (متی، مرقس، لوقا، یوحنا) کا مطالعہ آپ کو مسیح کی زندگی اور خدمت سے واقفیت دلائے گا۔

اِس کے بعد کچھ خطوط (رومیوں، افسیوں، فِلپیوں) پڑھیں۔ یہ خطوط سکھاتے ہیں کہ ہماری زندگی خُدا کے جلال کے لئے کیسی ہونی چاہیے۔ جب آپ پرانے عہد نامہ پڑھنے کا آغاز کرتے ہیں تو پیدائش کی کتاب سے آغاز کریں۔ یہ کتاب بتاتی ہے کہ خُدا نے کیسے دُنیا کو خلق کیا اور انسان کیسے گناہ میں گِر گیا، اور کِس طرح گناہ کا اثر تمام دُنیا پر پڑا۔ خروج، احبار، گنتی، اور اِستثنا کی کتابیں پڑھنا اور سمجھنا مشکل ہو سکتی ہیں کیونکہ اِن میں خُدا کے تمام قوانین موجود ہیں جن کی فرمانبرداری کرنے کا مطالبہ خُدا نے بنی اسرائیل سے کیا۔ اگرچہ آپ کو اِن کتابوں کو نظر انداز نہیں کرنا چاہیے۔ بہتر ہو گا اگر آپ اِن کو بعد میں مطالعہ کرنے کے لئے چھوڑدیں۔ کسی بھی صورت میں، ہار ماننے کی کوشش مت کریں۔ بنی اسرائیل کی تاریخ کو جاننے کے لئے یشوع سے تواریخ کی کتابیں پڑھیں۔ زبور سے غزل الغزلات کی کتابیں آپ کو عبرانی شاعری اور حکمت کے بارے میں اچھا احساس دیں گی۔ نبوتی کتابیں یسعیاہ سے ملاکی بھی سمجھنا مشکل ہو سکتی ہیں۔ یاد رکھیں بائبل کو سمجھنے کی کُلید خُدا سے حکمت مانگنا ہے (یعقوب5:1)۔ خُدا بائبل کا مصنف ہے اور وہ چاہتا ہے کہ آپ اُس کے کلام کو سمجھیں۔

یہ جاننا ضروری ہے کہ ہر ایک بائبل کا کامیاب طالب علم نہیں بن سکتا۔ صرف وہی بن سکتے ہیں جن کے پاس خُدا کے کلام کو پڑھنے کی ضروری "قابلیت" اور خُدا کی برکات ہیں۔

کیا آپ یسوع مسیح پر ایمان لانے سے نجات یافتہ ہیں (1کرنتھیوں16-14:2)؟

کیا آپ خُدا کے کلام کے بھوکے اور پیاسے ہیں (1پطرس2:2)؟

کیا آپ محنت کے ساتھ خُدا کےکلام کی تحقیق کرتے ہیں (اعمال11:17)؟

اگر آپ کا جواب ہاں کے ساتھ ہے، تو آ پ یقین کر سکتے ہیں کہ خُدا آپ کو اُس کے کلام کو جاننے کی جستجو کی وجہ سے برکت دے گا، اِس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ آپ پڑھنے کے لئے کہاں سے آغاز کرتےہیں اور کونسا طریقہ استعمال کرتے ہیں۔ اگر آپ کو اِس بات کو یقین نہیں ہے کہ آپ مسیحی ہیں، اور آپ نے مسیح پر ایمان لانے کے سبب نجات حاصل کر لی ہے، اور آپ روح القدس سے معمور ہو چُکے ہیں، تو آپ کے لئے خُدا کے کلام کے معنی جاننا ناممکن ہو گا۔ بائبل کی سچائیاں اُن لوگوں سے پوشیدہ ہیں جو ایمان کے وسیلہ سے مسیح کے پاس نہیں آتے، لیکن جو ایمان رکھتے ہیں وہ خود زندگی ہیں (1کرنتھیوں14-13:2؛ یوحنا63:6)۔

English
اردو ہوم پیج میں واپسی
ہمیں بائبل پڑھنے کا آغاز کہاں سے کرنا چاہیے؟