مکاشفہ کی کتاب میں سات مُہریں اور سات نرسنگے کیا ہیں؟



سوال: مکاشفہ کی کتاب میں سات مُہریں اور سات نرسنگے کیا ہیں؟

جواب:
سات مُہرِیں (مکاشفہ 5-1:8 ,17-1:6)، سات نرسنگے (مکاشفہ :8 21-6، 19-15:11)، اور قہر کے سات پیالے (مکاشفہ 21-1:16) آخری ایام میں خُدا کی عدالت کے تین یکے بعد دیگر سلسلے ہیں۔جیسے ہی آخری ایام پیش قدمی کرتے ہیں خُدا کی عدالت آہستہ آہستہ بدتر اور زیادہ تُباہ کُن ہو جاتی ہے ۔ سات مُہریں، سات نرسنگے اور قہر کے سات پیالے ایک دوسرے کے ساتھ منسلک ہیں۔ ساتویں مُہر سات نرسنگوں کا تعارف کرواتی ہے (مکاشفہ 5-1:8)، اور ساتواں نرسنگا قہر کے سات پیالوں کو متعارف کرواتا ہے (مکاشفہ :11 19-15، 8-1:15)۔

سات مُہروں میں سے پہلی چار مکاشفہ کے چار گھڑ سواروں کے طور پر جانی جاتی ہیں۔ پہلی مُہر مخالفِ مسیح کو متعارف کرتی ہے (مکاشفہ 2-1:6)۔ دوسری مُہر عظیم جنگوں کا سبب بنتی ہے (مکاشفہ 4-3:6)۔ تیسری مُہر قحط سالی کا سبب بنتی ہے (مکاشفہ 6-5:6)۔ چوتھی مُہر وباؤں، مزید قحطوں، اور مزید جنگوں کا سبب بنتی ہے (مکاشفہ 8-7:6)۔

پانچویں مُہر اُن لوگوں کے بارے میں بتاتی ہے جو آخری ایام کے دوران مسیح پر ایمان رکھنے کے سبب سے شہید ہوں گے (مکاشفہ 11-9:6)۔ خُدا انصاف کے لئے اُن کی التجا کو سُنتا ہے اور اُن کو چھٹی مُہر کی شکل میں نرسنگوں اور قہر کے پیالوں کی عدالت کے ساتھ بچاتا ہے۔ جب چھٹی مُہر کھولی جاتی ہے ایک تباہ کُن زلزلہ آتا ہے، جو کہ غیر معمولی اجرامِ فلکی کے مظہر کے ساتھ خوفناک تباہی کا سبب بنتی ہے (مکاشفہ :6 14-12)۔ جو بچ جائیں گے وہ چلائیں گے، "ہم پر گر پڑو اور ہمیں اُس کی نظر سے جو تخت پر بیٹھا ہوا ہے اور برّہ کے غضب سے چھِپا لو۔ کیونکہ اُن کے غضب کا روزِ عظیم آ پہنچا ۔ اب کون ٹھہر سکتا ہے؟" (مکاشفہ 17-16:6)۔

ساتویں مُہر کا ذکر مکاشفہ 13-6:8 میں ملتا ہے۔ سات نرسنگے سات مُہروں کا مواد ہے (مکاشفہ 5-1:8)۔ پہلا نرسنگا آگ اور اولوں کا سبب بنتا ہے جو دُنیا کے تہائی درختوں کو تباہ کر دیتے ہیں (مکاشفہ 7:8)۔ دوسرا نرسنگا سمندر کے تہائی جاندار مخلوقات کی موت کا سبب بنتا ہے (مکاشفہ 9-8:8)۔ تیسرا نرسنگا دوسرے سے مِلتا جُلتا ہے جو سمُندر کے علاوہ دُنیا کی جھیلوں پراثر انداز ہوتا ہے۔ (مکاشفہ 11-10:8)۔

چوتھا نرسنگا سورج اور چاند کو تاریک کر دیتا ہے (مکاشفہ 12:8)۔ پانچویں نرسنگے کا نتیجہ شیطانی ٹڈیاں ہوتی ہیں جو انسانوں پر حملہ کرتی اور اُنہیں اذیت پہنچاتی ہیں (مکاشفہ :1 11-1)۔ چھٹے نرسنگے پر شیطانی فوج آزاد ہو جاتی ہے اور تہائی انسانوں کو مار ڈالتی ہے (مکاشفہ 21-12:9)۔ ساتواں نرسنگا خُدا کے قہر کے سات پیالوں کے ساتھ فرشتوں کو بُلاتا ہے (مکاشفہ 8-1:15 ,19-15:11)۔

خُدا کے قہر کے سات پیالوں کا ذکر مکاشفہ 21-1:16میں ملتا ہے۔ سات پیالوں کی عدالت ساتویں نرسنگے کے ساتھ شروع ہوتی ہے۔ پہلا پیالہ بُرے اور تکلیف دہ ناسوروں کا سبب بنتا ہے (مکاشفہ 2:16)۔ دوسرے پیالے کا نتیجہ سُمندر کے تمام جانداروں کی موت ہوتا ہے (مکاشفہ 3:16)۔ تیسرا پیالہ دریاؤں کے پانی کو خون بنا دیتا ہے (مکاشفہ 7-4:16)۔ چوتھے پیالے کے انڈیلے جانے کے ساتھ ہی سورج کی گرمی بڑھ جاتی ہے جس سے تہائی انسان جھُلس جاتے ہیں (مکاشفہ :16 9-8)۔ پانچواں پیالہ گہری تاریکی اور پہلے پیالے سے پیدا ہونے والے ناسوروں کی تکلیف میں شدت کا سبب بنتا ہے (مکاشفہ 11-10:16)۔ چھٹے پیالے کے انڈیلے جانے کے نتیجہ کے طور پر دریائے فرات سوکھ جاتا ہے اور مخالفِ مسیح کی فوجیں ہر مجدون کی جنگ کے لئے ایک ساتھ جمع ہو جاتی ہیں (مکاشفہ 14-12:16)۔ ساتویں پیالے کا نتیجہ تباہ کُن زلزلہ ہوتا ہے جس کے ساتھ من من بھر کے اولے گرتے ہیں (مکاشفہ 21-15:16)۔

مکاشفہ 7-5:16 خُدا کا اعلان کرتی ہے، "کہ اے قدوس! جو ہے اور جو تھا تو عادِل ہے کہ تُو نے یہ انصاف کیا۔ کیونکہ اُنہوں نے مُقدسوں اور نبیوں کا خون بہایا تھا اور تُو نے اُنہیں خون پلایا۔ وہ اِسی لائق ہیں۔ پھر میں نے قُربان گاہ مین سے یہ آواز سُنی کہ اے خُداوند خُدا قادرِ مطلق! بیشک تیرے فیصلے درُست اور راست ہیں"۔

English



اردو ہوم پیج میں واپسی



مکاشفہ کی کتاب میں سات مُہریں اور سات نرسنگے کیا ہیں؟