کیا آسمان پر بیاہ شادی ہو گی؟


سوال: کیا آسمان پر بیاہ شادی ہو گی؟

جواب:
بائبل ہمیں بتاتی ہے، "کیونکہ قیامت میں بیاہ شادی نہ ہو گی بلکہ لوگ آسمان پر فرشتوں کی مانند ہوں گے"(متی باب 22 آیت 30)۔ یہ ایک سوال کا جواب تھا جو یسوع نے ایک عورت کے بارے میں کئے گئے سوال کے ردِ عمل میں دیا، جو اپنی زندگی میں کثیر شادیاں کر چُکی تھی۔ آسمان پر اِس کی کِس سے شادی ہو گی (متی باب 22 آیات 23 تا 28)؟ظاہر ہے، آسمان پر شادی جیسی کوئی چیز نہیں ہو گی۔ اِس کا یہ مطلب نہیں کہ شوہر اور بیوی ایک دوسرے کو آسمان پر جان نہیں سکیں گے۔ اِس کا یہ بھی مطلب نہیں ہے کہ شوہر اور بیوی آسمان پر قریبی تعلقات نہیں رکھ سکتے۔ تو اِس سے کیا اشارہ ملتا ہے، حالانکہ آسمان پر شوہر اور بیوی کی شادی نہیں ہو گی۔

سب سے زیادہ قابلِ اعتماد بات یہی ہے کہ آسمان پر شادی نہیں ہو گی کیونکہ اِس کی کوئی ضرورت نہیں ہو گی۔ جب خُدا نے شادی کو تشکیل دیا، تو اُس نے کچھ ضروریات کو پورا کرنے کے لئے ایسا کیا۔ پہلی بات، اُس نے دیکھا کہ آدم کو ایک ساتھی کی ضرورت ہے۔ "خُداوند نے کہا آدم کا اکیلا رہنا اچھا نہیں۔ میں اُس کے لئے ایک مددگار اُس کی مانند بناؤں گا" (پیدائش باب 2 آیت 18)۔ حوا آدم کی تنہائی کے مسلے کا حل تھی، اور اِس کے ساتھ ساتھ ایک "مددگار" کے طور پر اُس کی ضرورت بھی تھی، ایسا مددگار جو اُس کے ساتھی کے طور پر اُس کے ساتھ ساتھ چلے ، اور اُس کی زندگی میں اُس کے ساتھ رہے۔ تاہم، آسمان میں تنہائی نہیں ہو گی، اور نہ ہی وہاں کسی مددگار کی ضرورت ہو گی۔ ہمارے چوگِرد ایمانداروں اور فرشتوں کا ہجوم ہو گا (مکاشفہ باب 7 آیت 9)، اور بشمول ساتھیوں کی ضرورت کے ہماری تمام تر ضروریات پوری ہوں گی۔

دوسری بات، خُدا نے شادی کو افزائشِ نسل کے ایک ذریعہ کے طور پر اور انسانوں کے ساتھ زمین کو بھرنے کے لئے خلق کیا۔ تاہم، آسمان کو افزائشِ نسل سے آباد نہیں کیا جائے گا۔ جو آسمان پر جاتے ہیں وہ یسوع مسیح پر ایمان لانے سے جاتے ہیں۔ وہ وہاں نسلی تسلسل کے مقصد سے تخلیق نہیں کئے جائیں گے۔ اِس لئے، آسمان پر شادی کے لئے کوئی مقصد نہیں ہے کیونکہ وہاں تنہائی یا افزائشِ نسل نہیں ہو گی۔

English
اردو ہوم پیج میں واپسی
کیا آسمان پر بیاہ شادی ہو گی؟