کلام پاک شادی کی بابت کیا کہتا ہے؟



سوال: کلام پاک شادی کی بابت کیا کہتا ہے؟

جواب:
کلام پاک پیدایش24- 2:23 میں شادی کی تخلیق کو قلمبند کرتا ہے: "اور آدم نے کہا کہ یہ تو اب میری ہڈیوں میں سے ہڈی اور میرے گوشت میں سےگوشت ہے اس لئے وہ ناری کہلائیگی کیونکہ وہ نر سے نکالی گئی اس واسطے مرد اپنے مانباپ کو چھوڑیگا اور اپنی بیوی سے ملا رہیگا اور وہ دونوں ایک تن ہونگے"۔ خدا نے آدمی کو بنایا اور پھراس کے لئے حوا کو بناکر لےآیا کہ وہ اسے تسلیم کرے۔ کلام پاک میں شادی خدا کا "قائم شدہ" ہے اس حقیقت بطور کہ "آدمی کا اکیلا رہنا اچھا نہیں ہے" (پیدایش 2:18)۔

جس طرح کلام پاک پہلی شادی کا ذکر کرتا ہے، وہ حوا کی پہچان کے لئے مددگار کا لفظ استعمال کرتا ہے (پیدایش 2:20)۔ اس عبارت میں "مدد" کرنے کا مطلب ہے "گھیرے رہنا، حفاظت کرنا یا ساتھ دینا" ہے۔ خدا نے حوا کو بنایا تاکہ وہ "دوسری آدھی" بطور آدم کے برابر برابر (پہلو بہ پہلو) چلی آ‏ئے، اس کا سہارا اور اس کی مددگار بنے۔ کلام پاک کہتا ہے کہ شادی ایک آدمی اور عورت کو "ایک جسم" ہونے کا سبب بناتا ہے۔ یہ یکتائی جسمانی اتحاد میں پورے طور سے جنسی گہرے تعلق کو ظاہر کرتا ہے۔ اس یکتائی کی بابت نیا عہدنامہ ایک خطرے کی علامت کو پیش کرتا ہے "پس وہ دو نہیں بلکہ ایک جسم ہیں۔ اس لئے جسے خدا نے جوڑا ہے اسے آدمی جدا نہ کرے" (متی 19:6)۔

پولس رسول کے کئي خطوط شادی کا حوالہ پیش کرتے ہیں کہ کس طرح ایمانداروں کو شادی کے رشتہ کے دائرہ میں رہکرچلنا ہے۔ ایک ایسی ہی عبارت افسیوں23- 5:23 میں پائی جاتی ہے۔ اس عبارت کا مطالعہ کچھ اہم سچائیوں کو فراہم کرتا ہے کہ کلام پاک شادی سے متعلق کونسی بات کہتا ہے جو ہونی چاہئے۔

کلام پاک افسیوں کے 5 باب میں کہتا ہے کہ ایک کامیاب بائیبل کےموافق شادی میں شوہر اور بیوی دونوں کچھ خاص اداکاریاں نبھاتے ہیں : "ائےبیویو! اپنے شوہروں کو ایسی تابع رہو جیسے خداوند کی۔ کیونکہ شوہر بیوی کا سر ہے اور وہ خود بدن کا بچانے والا ہے"۔ (افسیوں23- 5:22)۔ "ائے شوہرو! اپنی بیویوں سے محبت رکھو جیسے مسیح نے بھی کلیسیا سے محبت کرکے اپنے آپکو اس کے واسطے موت کے حوالہ کردیا" (افسیوں 5:25)۔ "اسی طرح شوہروں کے لازم ہے کہ اپنی بیویوں سے اپنے بدن کی مانند محبت رکھیں۔ جو اپنی بیوی سے محبت رکھتا ہے وہ اپنے آپ سے محبت رکھتا ہے کیونکہ کسی نےبھی اپنے جسم سے دشمنی نہیں کی بلکہ اس کو پالتا اور پرورش کرتا ہے جیسے کہ مسیح کلیسیا کو" (افسیوں29- 5:28)۔ "اسی سبب سے آدمی باپ سے اور ماں سے جدا ہوکر اپنی بیوی کے ساتھ رہیگا اور وہ دونوں ایک جسم ہونگے" (افسیوں 5:31)۔

جب ایک ایماندار شوہر اور بیوی کلام پاک کے مطابق خدا کے قائم شدہ شادی کے اصولوں کو انجام دیتے ہیں تو ایک مضبوط اور صحتمند شادی کے نتائج حاصل ہوتے ہیں۔ بائيبل کی بنیاد پر جو شادی ہوتی ہے اس میں شوہر اور بیوی دونوں مسیح کو اپنا سرپرست مانتے ہیں۔ بائیبل کی شادی کا تصور ایک شوہر اور ایک بیوی کے درمیان ایکتائی کو شامل کرتا ہے اور یہ مسیح کو اس کی کلیسیا کے ساتھ ایکتائي کی تصویر کو پیش کرتا ہے۔



اردو ہوم پیج میں واپسی



کلام پاک شادی کی بابت کیا کہتا ہے؟