کیا ہمیں گنہگار سے محبت لیکن گناہ سے عداوت کرنی چاہیے؟


سوال: کیا ہمیں گنہگار سے محبت لیکن گناہ سے عداوت کرنی چاہیے؟

جواب:
بہت سے مسیحی "گنہگار سے محبت، گناہ سے نفرت" فقرہ استعمال کرتے ہیں۔ تاہم ہمیں یہ احساس ہونا چاہیے کہ ہمیں یہ نصیحت غیر کامل انسانوں کے طور پر کی گئی ہیں۔ محبت اور نفرت کے بارے میں ہمارے اور خُدا کے درمیان بہت بڑا فرق ہے۔ یہاں تک کہ مسیحیوں کے طور پر ہم اپنی انسانیت میں نامکمل رہتے ہیں اور کامل طور پر محبت نہیں کر سکتے، اور نہ ہی ہم کامل طور پر کسی چیز سے نفرت کر سکتے ہیں۔ لیکن خُدا اِن دونوں کو مکمل طور پر کر سکتا ہے، کیونکہ وہ خُدا ہے۔ خُدا بغیر کسی گناہ آلودہ اِرادے کے نفرت کر سکتا ہے۔ اِس لئے وہ کامل مقدس طریقے سے گناہ اور گنگار سے عداوت کر سکتا ہے اور پھر بھی اُس گنہگار کے توبہ کرنے اور ایمان لانے کے وقت اُس کو پُرمحبت معافی فراہم کرنے کو تیار رہتا ہے(ملاکی پہلا باب آیت 3؛ مکاشفہ باب 2 آیت 6؛ دوسرا پطرس باب 3 آیت 9)۔

بائبل واضح طور پر سکھاتی ہے کہ خُدا محبت ہے۔ پہلا یوحنا باب 4 آیات 8تا 9 فرماتی ہیں، "جو محبت نہیں رکھتا وہ خُدا کو نہیں جانتا کیونکہ خُدا محبت ہے۔ جو محبت خُدا کو ہم سے ہے وہ اِس سے ظاہر ہوئی کہ خُدا نے اپنے اِکلوتے بیٹے کو دُنیا میں بھیجا ہے تاکہ ہم اُس کے سبب سے زندہ رہیں"۔ یہ بات پُراسرار لیکن سچ ہے کہ خُدا ایک ہی وقت میں کامل طور پر کسی شخص سے محبت اور نفرت کر سکتا ہے۔ اِس کا مطلب ہے کہ وہ اِس سے پیار کر سکتا ہے کیونکہ اُس نے اِسے خلق کیا اور اُسے نجات دے سکتا ہے، اور اُس کی بے ایمانی اور گناہ آلودہ طرزِ زندگی کی وجہ سے اُس سے عداوت بھی رکھ سکتا ہے۔ غیر کامل انسان کے طور پر ہم یہ کام نہیں کر سکتے ، اِس طرح ہمیں خود کو یاد دِلانا ضروری ہے کہ "گنہگار سے محبت ، لیکن گناہ سے عداوت کرو"۔

یہ کام کیسے ہو سکتا ہے؟ ہم گناہ میں شامل ہونے سے انکار کرتے ہوئے، اور جب بھی اِسے دیکھتے ہیں اِس کی مذمت کرتے ہوئے اُس سے عداوت کرتے ہیں۔ گناہ سے نفرت کرنی چاہیے، کوئی عُذر نہیں ہونا چاہیے یا اِسے ہلکا نہیں لینا چاہیے۔ ہم گنہگاروں کو گناہوں کی معافی کی گواہی دینے میں وفادار ہوتے ہوئے جو یسوع مسیح کے وسیلہ سے اُن کے لئے دستیاب ہے اُن سے محبت کرتے ہیں۔ محبت کا حقیقی عمل کسی شخص کے ساتھ احترام اور مہربانی کے ساتھ سلُوک کرنا ہے اگرچہ وہ اِس بات کو جانتا ہو کہ آپ اُس کی طرزِ زندگی اور اُس کی پسند اور ناپسند کو قبول نہیں کرتے۔ کسی شخص کو گناہ میں پھنسنے کی اجازت دینا محبت کرنا نہیں ہے۔ اِسی طرح کسی شخص کو بتانا کہ وہ گناہ میں زندگی گزار رہا ہے اُس سے نفرت کرنا نہیں ہے۔ اصل میں درُست مخالفتیں سچ ہیں۔اگر ہم محبت میں سچ بولتے ہیں تو گنہگار سے محبت کرتے ہیں۔ ہم گناہ سے چشم پوشی کرنے، اِسے نظر انداز کرنے، اور اِسے بہانہ بنانے سے انکار کرتے ہوئے گناہ سے عداوت کرتے ہیں۔

English
اردو ہوم پیج میں واپسی
کیا ہمیں گنہگار سے محبت لیکن گناہ سے عداوت کرنی چاہیے؟