میں کس طرح جان سکتاہوں کہ مجھے محبت ہوگئی ہے؟



سوال: میں کس طرح جان سکتاہوں کہ مجھے محبت ہوگئی ہے؟

جواب:
محبت ایک زور آور جذبہ ہے یہ ہماری زندگیوں میں بہت زیادہ قائل کرتاہے۔ ہم جذبات میں بہہ کر اسکی بنیاد پرکئی ایک فیصلے لیتے، یہاں تک کہ شادی بھی کر لیتےہیں کیونکہ ہم محسوس کرتےہیں کہ ہم کو "محبت" ہو گئی ہے۔ یہ ایک سبب ہو سکتاہے کہ ان میں سے کئی ایک شادیاں طلاق پر جا کر ختم ہوجاتی ہیں۔ کلام پاک ہمیں تعلیم دیتاہےکہ حقیقی محبت جذباتی نہیں ہوتا جو ہوا اور کچھ دن بعد ختم ہوگیا۔ مگر حقیقی محبت ایک فیصلہ کن ہوتاہے۔ ہم کو انہیں سے پیار نہیں کرنی چاہئے جو ہم سے پیار کرتےہیں بلکہ ہم کو ان سے بھی پیار کرنی چاہئے جو ہم سے نفرت کرتےہیں۔ کیونکہ مسیح نے بھی ان سے محبت رکھی جو اس سے محبت نہیں رکھتے تھے۔ (لوقا 6:35)۔ کلام میں اس طرح لکھا ہے کہ "محبت صابر ہے اور مہربان۔ محبت حسد نہیں کرتی۔ محبت شیخی نہیں مارتی اور پھولتی نہیں۔ نازیبا کام نہیں کرتی۔ اپنی بہتری نہیں چاہتی۔ جھنجھلاتی نہیں۔ بد گمانی نہیں کرتی۔ بدکاری سے خوش نہیں ہوتی۔ بلکہ راستی سے خوش ہوتی ہے۔ سب کچھ سہہ لیتی ہے سب کچھ یقین کرلیتی ہے۔ سب باتوں کی امید رکھتی ہے۔ سب باتوں کی برداشت کرتی ہے" (1 کرنتیھوں 7 – 13:4)۔

کسی سے "پیار ہوجانا" یہ بہت آسان بات ہے مگر یہ فیصلہ کرنے سے پہلے کہ ہم کو سچی محبت کا احساس ہوا ہے کچھ سوالات ہیں جن کاپوچھا جانا ضوری ہے۔ پہلا ہے۔ کیا وہ شخص مسیحی ہے؟ مطلب یہ کہ کیا اس نے اپنی زندگی مسیح کو دے رکھی ہے؟ کیا وہ لڑکا/لڑکی نجات کے لئے صرف مسیح پر اعتقاد کرتا/کرتی ہے؟ یہ بھی کہ اگر آپ لحاظ کرکے اس ایک شخص کو اپنا دل اور اپنے جذبات نچھاورکرتےہیں توآپ کو خود سے پوچھنا چاہئے کہ کیا آپ دیگر لوگوں سے زیادہ اس کو چاہتے اور اپنی خواہشات کا اظہارکرتے اور خدا کے بعد اس کو دوسرا درجہ دیتے ہیں؟ کلام پاک ہم سے کہتاہے کہ "جب دو لوگ شادی کرتے ہیں تو وہ ایک جسم ہو جاتے ہیں" (پیدائش 2:24؛ متی 19:5)۔

دوسری بات جس پر دھیان دینے کی ضرورت ہے وہ یہ کہ ہر صورت میں جو ہمارے عزیز قریبی رشتہ دار ہوتےہیں وہی ان میں سے دولہایا دلہن ہونے لائق امید وار ہوتے ہیں۔ اسکے باوجود بھی یہ دیکھنا ضروری ہےکہ کیا وہ مرد/عورت اپنی زندگی میں پہلے سے ہی خدا کو پہلا اور سب سے زیادہ درجہ دیتا / دیتی ہے؟ کیا وہ مرد/عورت اپنا وقت اور طاقت ایک شادی کے رشتہ کو بنانے میں لگاتا/ لگاتی ہے جو زندگی بھر کے لئے برقرار رہے گا؟ ایسی کو ئی ناپ تول کی چھڑی نہیں ہے یہ فیصلہ کرنے کے لئےکہ ہم (دولہایا دلہن) ایک دوسرے کے ساتھ کتنا پیار کرتے ہیں۔ مگر یہ پہچاننا ضروری ہے کہ ہم اپنے جذبات کے پیچھے چل رہے ہیں یااپنی زندگیوں کے لئے خداکی مرضی کےپیچھے چل رہے ہیں۔ حقیقی محبت صرف ایک جذبہ نہیں بلکہ ایک فیصلہ ہے۔ بائیبل کے مطابق محبت وہ ہے جو ہمیشہ کے لئے کیاجاتا ہے یہ نہیں کہ جب آپ محبت کااحساس کریں تبھی محبت سے پیش آئیں۔



اردو ہوم پیج میں واپسی



میں کس طرح جان سکتاہوں کہ مجھے محبت ہوگئی ہے؟