ہم جنس کے ساتھ شادی منانے اور صحبت کرنے کی بابت بائبل کیا کہتی ہے؟



سوال: ہم جنس کے ساتھ شادی منانے اور صحبت کرنے کی بابت بائبل کیا کہتی ہے؟

جواب:
جبکہ بائبل ہم جنس کے ساتھ متاثر ہونے یعنی ہم جنسی صحبت کو پیش کرتی ہے تو یہ واضح طور سے ایک جنسی ہونے/ ایک جنس کے ساتھ جسمانی تعلقات کا بیان نہیں کرتی۔ یہ صاف ہے کہ کسی طرح بائبل ایک جنسی جسمانی تعلقات کو ایک بد اخلاقی یا بد کرداری اور غیر فطرتی گناہ بطور ملامت کرتی ہے۔ احبار 18:22 میں، ایک مرد دوسرے مرد کے ساتھ صحبت کرنے کو ایک مکروہ کام اور قابل نفرت گناہ قرار دیتا ہے۔ رومیوں 27 – 1:26 اعلان کرتاہے کہ ایک جنسی ہونے کے جنسی خواہشات اور عمل ان کو بائبل میں ملامت کیا گیا ہے۔ یہ دونوں شرمناک، غیر فطرتی، شہوت سے بھرا اور بے حیائی کا کام ہے۔ 1 کرنتھیوں 6:9 بیان کرتا ہے کہ لونڈے باز، غیر راستباز اور فاسق ہیں اور یہ ہر گز خداکی بادشاہی کے وارث نہ ہوں گے۔ اور یہ بات صاف ہے کہ ایک جنس کے ساتھ شادی منانا خدا کی مرضی کے خلاف ہے اور یہ در حقیقت ایک سنجیدہ گناہ ہے۔

جب کبھی بائبل شادی کا ذکر کرتی ہے تو ایک آدمی اور ایک عورت کے بیچ ہے۔ بائبل میں جب پہلی بار شادی کا ذکر ہوا تو پیدائش 2:24 بیان کرتاہے کہ آدمی اپنے ماں باپ سے جدا ہو کر اپنی بیوی سے ملا رہے گا۔ دیگر عبارتوں میں شادی سے متعلق جو تعلیم پائی جاتی ہے جیسے کہ 1 کرنتھیوں 16- 7:2 اور افسیوں 33- 5:23، بائبل صاف طور سے شادی کی پہچان ایک آدمی اور ایک عورت کے بیچ ہونے کو پیش کرتی ہے۔ بائبل کے نظریہ سے شادی ایک آدمی اور عورت کے بیچ زندگی بھر کا اتحاد ہے خاص طور سے ایک خاندان کی تعمیر کے مقصد کے لئے اور اس خاندان کے مستحکم ماحول کی فراہمی کے غرض سے۔

شادی کی سمجھ کے لئے کسی طرح صرف بائبل کو ہی لکھی ہوئی دستاویز بطور استعمال نہیں کیا گیا ہے، بلکہ شادی سے متعلق بائبل کا نظریہ دنیا کی تاریخ میں، ہر ایک انسانی معاشرہ میں ایک عالمگیر شادی کی سمجھ بطور مانا گیا ہے۔ تاریخ، ایک جینسی جسمانی تعلقات کے خلاف ثبوت پیش کرتی ہے۔ موجودہ غیر مذہبی نفسیات پہچانتے ہیں کہ تمام آدمی اور عورتیں نفسیاتی اور جذباتی طور سے ایک دوسرے کو قبول کرنے کے لئے تجویز کئے کئے ہیں۔ خاندان کے معاملہ میں علم النفسیات کے ماہر جدو جہد کرتے ہیں کہ ایک آدمی اور ایک عورت کے بیچ کا اتحاد جس میں دووں شریک حیات ایک اچھے جنسی اداکاری کا نمونہ بنیں جس سے بچے پیدا کرنے کا ایک بہترین ماحول بن سکے۔ نفسیات ایک جنسی ہونے کے خلاف ثبوت پیش کرتےہیں۔

فطرت میں یا نفسانی طور سے صاف ظاہر ہے کہ آدمی اور عورتیں دونوں مل کر جنسی طور سے "موزوں" قرار دئے گئے ہیں۔ جنسی مباشرت کے قدرتی مقصد کے ساتھ بچے پیدا کرنا صاف طور سے یہی آدمی اور عورت کے بیچ ایک جنسی تعلق ہے جو اس مقصد کوپورا کر سکتا ہے۔ مگر قدرت بھی ایک جنسی ہونے کے خلاف ثبوت پیش کرتی ہے۔

اس قدر، اگر بائبل، تاریخ، نفسیات اور قدرت سب کے سب ایک آدمی اور ایک عورت کے بیچ شادی کے حق میں ثبوت پیش کرتے ہیں۔ تو یہ موجودہ دور میں اس طرح کا مباحثہ کیوں ہے؟ کیوں وہ لوگ جو ایک جنس کے ساتھ شادی مناتے یا صحبت کرتے اور ایک دوسرے سے متاثر ہوتے ہیں انہیں لوگ نفرت کی نگاہ سے دیکھتے اور ان کے ساتھ غیر روا داری کے ساتھ پیش آتے ہیں بھلے ہی کتنی عزت کے ساتھ مخالفت پیش کی جائے وہ ایک متعصب شخص جانے جاتے ہیں؟ کیوں ایک جنسی ہونے کے حقوق کی تحریک کوبڑے حملہ آورانہ انداز سے ایک جنسی ہونے/ ایک جنس کے ساتھ شادی منانے کی طرف ترغیب دئے جاتے ہیں؟ جبکہ اکثر لوگ چاہے وہ مذہبی ہوں یا غیر مذہبی اس کی حمایت کرتے — یا کم از کم ان کی طرف سے مخالفت کم ہوی ہے — ایک جنسی جوڑوں کے پاس کیا وہ تمام قانونی حقوق پائے جاتے ہیں جیسے عام شادی شدہ جوڑوں کے پاس ہوتی ہے؟

بائبل کے مطابق جو اب یہ ہے کہ ہر کوئي ذاتی طور سے جانتا ہے کہ ایک جنس کے ساتھ متاثر ہونا ایک بد اخلاقی اور غیر فطرتی ہے۔ اس ذاتی علم کو کچل دینے کا ایک ہی طریقہ ہےکہ ایک جنسی ہونے کو طبعی حالت پر لے آنا اور اس کے تمام مخالفوں پر حملہ کرنا۔ ایک جنسی ہونے کو طبعی حالت میں لانے کا بہتر طریقہ ہے ایک جنس کے ساتھ متاثر ہونے اور ایک جنس کے ساتھ صحبت کو روایاتی مخالف جنسی (مرد اور عورت ) کے شادی کے ساتھ مستوی طور پر رکھیں۔ اس کا موازنہ کریں۔ رومیوں 32 – 1:18 اس بات کی مثال پیش کرتا ہے کہ سچائی کو جانا جا چکا ہے کیونکہ خدا نے اس کو ظاہر کر دیا ہے مگر کچھ برے لوگوں کے ذریعہ سچائی کا انکار کیا گیا اور اس کی جگہ پر جھوٹ رکھ دیا گیا۔ پھر اس جھوٹ کو بڑھاوا دیا گیا اور سچائی کو کچل دیا گیا اور اس پر حملہ کیا گیا۔ مطلب یہ کہ کچھ لوگوں نے خداکی سچائی بدل کر جھوٹ بنا ڈالا اور بہتوں کے ذریعہ ایک جنسی ہونے کے حقوق کے لئے جوشیلے پن اور غصہ کا اظہار کیا گیا تاکہ جو ان کی مخالفت کرے حقیقت میں ایک اشارہ ہے کہ ان کی حالت نا قابل حمایت ہے۔ اور آپ کی آواز بلند کرتے ہوئے ایک کمزور حالت پر غالب آنے کی کوشش، اور یہ بحث کی کتاب میں سب سے پرانی چال ہے۔ موجودہ ایک جنسی حقوق کی کارروائی نامہ کے لئے شاید رومیوں 1:31 کے علاوہ کچھ اور زیادہ درست بیان نہیں پایا جاتا جہاں اس طرح لکھا ہے کہ یہ لوگ نا پسندیدہ عقل رکھنے والے یعنی بے عقل، بے ایمان (بے اعتقاد)، بے رحم اور سنگ دل ہیں۔

ایک ہی جنس کے لڑکے/ مردیا لڑکیوں/ عورتوں کا آپس میں متاثر ہونا یا ان کے ساتھ شادی منانے کے تصدیق کرنے اور ایک جنسی ہو کر جینے کے انداز کو منظوری دینا اس کے لئے کلام پاک بائبل صاف طورسے، با اصول طریقہ سے ایک گنہ گار ہونا قرار دیتا اور اس کی ملامت کرتا ہے، مسیحیوں کو ایک جنس کے لوگوں سے متاثر ہونے یا ان کے ساتھ شادی منانے کے خیال کے خلاف مضبوطی سے کھڑے ہونے چاہئے۔ اس کے علاوہ ایک جنسی ہونے اور ایک جنسی ہو کر شادی منانے کے خلاف مضبوط اور قانونی طور سے ثبوت پیش کیا گیا ہے یہ سراسر غلط اور بائبل کی سچائی سے بالکل ہٹ کر ہے۔ ایک شخص جو بشارتی مسیحی (پرچارک) ہو اسے اس شادی کو پہچاننے کی ضرورت ہے جو ایک آدمی اور عورت کے بیچ ہوتی ہے۔

بائبل کے مطابق شادی ایک آدمی اور ایک عورت کے بیچ خداکی طرف سے ٹھہرائی گئی ہے (پیدائش 24- 2:21؛ متی 6- 19:4)۔ ایک ہی جنس کے درمیان شادی، خدا کی ٹھہرائی ہوئی شادی (مرد اور عورت کے بیچ) کے اصول کے خلاف ضلالت اور گمراہی ہے جس نے شادی کی بنیاد کو رکھا تھا۔ ہم کو مسیحی ہونے کے ناطے ایک جنس کے ساتھ شادی کے گناہ سے چشم پوشی یا نظر انداز نہیں کرنی چاہئے۔ اس کے بدلے ہم کو خداکی محبت اور گناہوں کی بخشش کی بابت جس میں ایک جنس کے ساتھ متاثر ہونے کا گناہ بھی شامل ہے لوگوں کو بتانے کی ضرورت ہے جو سب کے لئے یسوع مسیح کے ذریعہ دستیاب ہے۔ ہم کو بڑے پیار سے اس سچائي کی بابت بتانی چاہئے (افسیوں 4:15)۔ ہم کو "حلم اور خوف" کے ساتھ اس کے لئے کشمکش کرنے کی ضرورت ہے (1 پطرس 3:15)۔ مسیحی ہونے کے ناطے جب ہم سچائی کے لئےکھڑے ہوتے ہیں تو اس کا انجام ذاتی حملے، بدنامیاں، ستاؤ، اور مخالفت کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے مگر ہمیں یسوع کے الفاظ کو یاد رکھنا ضروری ہے "اگر دنیا تم سے عداوت رکھتی ہے تو تم جانتے ہو کہ اس نے تم سے پہلے مجھ سے بھی عداوت رکھی ہے۔ اگر تم دنیا کے ہوتے تو دنیا اپنوں کو عزیز رکھتی، لیکن چونکہ تم دنیا کے نہیں بلکہ میں نے تم کو دنیا میں سے چن لیا ہے" (یوحنا 19-18 :15)۔



اردو ہوم پیج میں واپسی



ہم جنس کے ساتھ شادی منانے اور صحبت کرنے کی بابت بائبل کیا کہتی ہے؟