خُدا کے سب ہتھیار کیا ہیں؟


سوال: خُدا کے سب ہتھیار کیا ہیں؟

جواب:
اصطلاح "خُدا کے سب ہتھیار" افسیوں 17-13:6میں دیکھی جا سکتی ہے، "اِس واسطے تم خُدا کے سب ہتھیار باندھ لو تاکہ بُرے دن میں مقابلہ کر سکو اور سب کاموں کو انجام دے کر قائم رہ سکو۔ پس سچائی سے اپنی کمر کس کر اور راستبازی کا بکتر لگا کر۔ پاؤں میں صُلح کی خوشخبری کی تیاری کے جُوتے پہن کر۔ اور اُن سب کے ساتھ ایمان کی سپر لگا کر قائم رہو۔ جِس سے تم اُس شریر کے سب جلتے ہوئے تیروں کو بُجھا سکو۔ اور نجات کا خَود اور رُوح کی تلوار جو خُدا کا کلام ہے لے لو"۔

افسیوں 12:6 واضح طور پر بیان کرتی ہے کہ ابلیس کے ساتھ جنگ روحانی ہے، اور اِس لئے مادی ہتھیار اُس کے خلاف اور اُس کے مقصد کے خلاف استعمال نہیں ہو سکتے۔ ہمیں مخصوص تدبیروں کی فہرست نہیں دی گئی جو شیطان استعمال کرتا ہے۔ تاہم اصطلاح بہت واضح ہے کہ جب ہم وفاداری سے تمام ہدایات پر عمل کرتے ہیں، تو ہم سامنا کرنے کے قابل ہو جائیں گے اور ہم شیطان کی منصوبہ بندی کے باوجود فتح حاصل کر لیں گے۔

ہمارے ہتھیار کا سب سےپہلا عنصر سچائی ہے (آیت 14)۔ اِسے سمجھنا آسان ہے چونکہ ابلیس کو "جھوٹوں کا باپ" کہا جاتا ہے (یوحنا 44:8)۔ دھوکہ دہی اُن باتوں مین سرِ فہرست ہے جن سے خُداوند کو کراہیت ہے۔ "جھوٹی زُبان" اُن چیزوں میں سے ایک ہے جن سے خُدا کو نفرت بلکہ کراہیت ہے (امثال 17-16:6)۔ اِس لئے ہمیں نصیحت کی گئی ہے کہ ہم اپنی پاکیزگی اور رہائی کے ساتھ ساتھ اُن لوگوں کے فائدہ کے لئے سچائی کو پہن لیں جن کو ہم گواہ بناتے ہیں۔

آیت 14 میں ہمیں راستبازی کا بکتر پہنے کو کہا گیا ہے۔ بکتر جنگجو کے اہم اعضا کو ضرب لگنے سے محفوظ رکھتا ہے جو کہ دوسری صورت میں جان لیوا ہو گا۔ راستبازی سے مراد راستبازی کے وہ کام نہیں ہیں جو انسان کرتے ہیں۔ بلکہ یہ راستبازی مسیح کی راستبازی ہے، جو خُدا منسوب کرتا ہے اور ایمان لانے سے حاصل ہوتی ہے، اور جو شیطان کے الزامات کے خلاف ہمارے دِلوں کی حفاظت کرتی ہے اور ہمارے اندر کے انسان کو حملوں سے محفوظ رکھتی ہے۔

آیت 15 روحانی جنگ کے لئے پاؤں کی تیاری کی بات کرتی ہے۔ جنگ میں، بعض اوقات دشمن سپاہیوں کو روکنے کے لئے راستے میں خطرناک رکاوٹ رکھ دیتا ہے۔ پاؤں میں صُلح کی کوشخبری کی تیاری کے جوتوں کا نظریہ یہ خیال پیش کرتا ہے کہ ہمیں شیطان کے علاقے میں آگے بڑھنے کی ضرورت ہے، اِس لئے اِس بات سے باخبر رہیں، کہ وہاں پھندے لگائے گئے ہوں گے، فضل کے پیغام کے ساتھ مسیح کے لئے روحیں جیتنا بہت ضروری ہے۔ شیطان نے انجیل کی نشرواشاعت کو اپاہج کرنے کے لئے راستے میں بہت سی رکاوٹیں پیدا کر دی ہیں۔

ایمان کی سپر کا ذکر آیت 16 میں ملتا ہے جو کہ واضح کرتی ہے کہ ابلیس ایمانداروں کے اندر خُدا کی وفاداری، اور اُسکے کلام کے موثر ہونےکے بارے میں شک کا بیج بوتا ہے۔ ہمارا ایمان جسکا "بانی اور کامل کرنے والا " (عبرانیوں 2:12) خود مسیح ہے، ایک سُنہری، قیمتی، مضبوط، اور اہمیت کی حامل سپر ہے۔

آیت 17 میں نجات کا خود جسم کے ایک حساس حصہ سر کو زندہ رکھنے کے لئے محافظت ہے۔ ہم کہہ سکتے ہیں کہ ہمارے سوچنے کے انداز کو محافظت کی ضرورت ہے۔ سر ذہانت کی جگہ ہے، جو ابدی زندگی کی اُمید انجیل کی یقین دہانی کو محفوظ رکھے گا، اور جھوٹی تعلیمات کو قبول نہیں کرے گا، اور نہ ہی شیطان کی آزمائشوں کو قبول کرے گا۔ غیر نجات یافتہ شخص جھوٹی تعلیمات کے جھونکوں سے بچنے کی اُمید نہیں رکھ سکتا، کیونکہ اُس کے پاس نجات کا خود نہیں ہے اور اُسکا ذہن روحانی سچائی اور روحانی دھوکہ دہی کے درمیان فرق پیدا کرنے کے قابل نہیں ہے۔

آیت 17 روح کی تلوار کے معنی بیان کرتی ہے، جو کہ خُدا کا کلام ہے۔ اگرچہ روحانی ہتھیار کے دوسرے حصے اپنی فطرت میں دفاعی ہیں، لیکن خُدا کے سب ہتھیاروں میں صرف روح کی تلوار ہی ہے جو حملہ آور ہتھیار ہے۔ یہ ہتھیار خُدا کے کلام کی قدرت اور پاکیزگی کی بات کرتا ہے۔ ایک بڑا روحانی ہتھیار قابلِ فہم نہیں ہے۔ مسیح یسوع کی بیابانی آزمائشوں میں، خُدا کا کلام ہمیشہ ابلیس کے مقابلہ میں نا قابلِ مذاحمت ردِعمل رہا۔ کتنی بابرکت بات ہے کہ وہی کلام آج ہمارے لئے بھی میسر ہے۔

آیت 18 ہمیں روح میں دُعا کرنے کی ہدایت کرتی ہے (جو کہ مسیح کے ذہن، اُسکے دِل اور اُسکی ترجیحات کے مطابق دُعا کرنا ہے) جو کہ خُدا کے سب ہتھیاروں میں ایک اضافہ ہے۔ ہم دُعا کو نظر انداز نہیں کر سکتے، کیونکہ یہ خُدا سے روحانی قوت حاصل کرنے کا ایک ذریعہ ہے۔ دُعا، اور خُدا پر بھروسہ کے بغیر، روحانی جنگ میں ہماری کاوشیں خالی ، کھوکھلی اور بے اثر ہیں۔ خُد اکے سب ہتھیار سچائی، راستبازی، انجیل، ایمان، نجات، خُدا کا کلام، اور دُعا خُدا کے فراہم کردہ ذرائع ہیں، جن کے وسیلہ سے ہم شیطان کے حملوں اور آزمائشوں پر غالب آتے ہوئے روحانی طور پر فتح مند ہو سکتے ہیں۔

English
اردو ہوم پیج میں واپسی
خُدا کے سب ہتھیار کیا ہیں؟