فِلیو کوے کلاؤز کیا ہے؟


سوال: فِلیو کوے کلاؤز کیا ہے؟

جواب:
"فِلیوکوے کلاؤز" روح القدس کے متعلق کلیسیاء میں ایک تنازعہ تھا، اور اب بھی ہے۔ سوال یہ ہے کہ "روح القدس کِس سے صادر ہوتا ہے، باپ سے، یا باپ اور بیٹے سے؟ لاطینی میں لفظ "فِلیوکوے" کے معانی "بیٹا" ہیں۔ اِسے "فِلیوکوے کلاؤز" کے طور پر پیش کیا جاتا ہے کیونکہ لفظ "بیٹا" نقائیہ کے عقیدہ میں یہ ظاہر کرنے کے لئے شامل کیا گیا کہ روح القدس باپ اور "بیٹے" سے صادر ہوتا ہے۔ اِس مسلہ پر بہت سی بحث و تکرار ہوئی جو آخر کار سن ۱۰۵۴ میں رومن کیتھولک اور اِیسٹرن آرتھوڈکس چرچز کے جُدا ہونے کا سبب بنی۔ یہ دونوں کلیسیائیں آج بھی اِس مسلہ پر متفق نہیں ہیں۔

یوحنا۲۶:۱۴ بیان کرتی ہے، "لیکن مددگار یعنی روح القدس جِسے باپ میرے نام سے بھیجے گا۔۔۔" یوحنا۲۶:۱۵ سکھاتی ہے، "لیکن جب وہ مددگار آئے گا جِس کو میں تُمہارے پاس باپ کی طرف سے بھیجوں گا یعنی روحِ حق جو باپ سے صادر ہوتا ہے تو وہ میری گواہی دے گا"۔ یوحنا۱۶:۱۴ اور فلِپیوں۱۹:۱ بھی دیکھیں۔ بائبل کے یہ حوالہ جات واضح کرتے ہیں کہ روح القدس باپ اور بیٹے دونوں سے صادر ہوتا ہے۔ فِلیوکوے کلاؤز میں بنیادی مسلہ روح القدس کی الوہیت کے دفاع کا ہے۔ بائبل مقدس واضح طور پر سکھاتی ہے کہ روح القدس خُدا ہے (اعمال۳:۵۔۴)۔ جو لوگ فِلیوکوے کلاؤز کی مخالفت کرتے ہیں اُن کا اعتراض ہے کہ باپ اور بیٹے سے روح القدس کو صادر کرنا روح القدس کو باپ اور بیٹے کے "ماتحت" کرنا ہے۔ جو فِلیوکوے کلاؤز کے عقیدے کو مانتے ہیں اُن کا ایمان ہے کہ روح القدس کے باپ اور بیٹے دونوں سے صادر ہونے سے روح القدس کے خُدا باپ اور بیٹے کے ہم رُتبہ ہونے پر کوئی اثر نہیں پڑتا۔

ممکن ہے کہ فِلیوکوے کلاؤز تنازعہ میں خُدا کی ذات کا کوئی ایسا پہلو بھی شامل ہو جسے ہم کبھی بھی پوری طرح سمجھ نہیں سکیں گے۔ خُدا جو لامحدود ہے، ہمارے محدود ا ذہان اور سمجھ سے بالاتر ہے۔ روح القدس خُدا ہے، جِسے خُدا نے یسوع مسیح کے "متبادل" کے طور پر زمین پر بھیجا۔ ممکن ہے کہ اِس سوال کا حتمی جواب نہ مل سکے کہ روح القدس کو باپ نے بھیجا تھا یا باپ اور بیٹے نے، اور نہ ہی اِس کے جواب کی اتنی ضرورت ہے۔ فِلیوکوے کلاؤز کو شاید ایک تنازع ہی رہنا پڑے گا۔

English
اردو ہوم پیج میں واپسی
فِلیو کوے کلاؤز کیا ہے؟