کس طرح میں اپنے دوستوں اور خاندان میں انہیں ٹھوکر کھلائے بغیر یا زبردستی سے مجبور کئے بغیر انجیل کی منادی کرسکتا ہوں؟



سوال: کس طرح میں اپنے دوستوں اور خاندان میں انہیں ٹھوکر کھلائے بغیر یا زبردستی سے مجبور کئے بغیر انجیل کی منادی کرسکتا ہوں؟

جواب:
ایک طرح سے دیکھا جائے تو ہر ایک مسیحی کا اپنے خاندان کے لوگ کوئی دوست، ساتھ میں کام کرنے والا یا جان پہچان کا شخص ضرور ہوتا ہے جو مسیحی نہیں ہے۔ دوسرے لوگوں میں انجیل کی منادی کرنا مشکل ہوسکتا ہے۔ اور خاص طور سے اور زیادہ مشکل ان کے ساتھ ہوجاتا ہے جس کے ساتھ ہمارا قریبی جزباتی رشتہ ہو۔ کلام پاک ہم سے کہتا ہے کہ انجیل کی منادی کی خاطر کچھ لوگ ٹھوکر کھائينگے (لوقا53- 12:51)۔ کسی طرح ہمکو حکم دیا گیا ہے کہ ہم انجیل کی منادی کریں اور یاد رکھیں کہ اسے نہ کرنے کے لئے ہمارے پاس کوئی بہانہ نہیں ہے۔ (متی20- 28:19؛ اعمال 8: 1؛ 1 پطرس 3:15)۔

سو ہم کس طرح دوستوں اور خاندان کے ممبران، ا پنے ساتھ کام کرنے والوں اور جان پہچان والوں میں انجیل کی منادی کرسکتے ہیں؟ سب سے زیادہ ضروری بات یہ ہے کہ ہم ان کے لئے دعا کرسکتے ہیں۔ دعا کریں کہ خدا ان کے دلوں کو بدلے اور انجیل کی سچائی کو ماننے کے لئے ان کی آنکھیں کھولے (2 کرنتھیوں 4:4)۔ دعا کریں کہ خدا اپنی محبت جو انکے لئے رکھتا ہے اور مسیح یسوع کے وسیلہ سے ان کی ضرورت جو نجات کے لئے ہے انہیں قائل کرے (یوحنا 3:16) ۔دانائی کے لئے دعا کریں کہ بہتر طریقہ سے ہم کسطرح ان کے درمیان انجیل کی خدمت کرسکتے ہیں (یعقوب 1:5)۔

اصلیت میں جب ہم انجیل کی منادی کے لئے نکلتے ہیں تو ہم کو اس کی چاہ اور ہمت ہونی چاہئے۔ اپنے دوستوں اور خاندانوں میں مسیح یسوع کے وسیلہ سے نجات کے پیغام کا اعلان کرو (رومیوں10- 10:9)۔ نجات کا پیغام سناتے وقت ہمیشہ آپ اپنے ایمان کی بابت بتانے کے لئے تیار رہیں (1 پطرس 3:15),ایسا کرنے سے آپ نیک دلی اور اور عزت کی قابل ٹہرینگے۔ شخصی طور سے انجیل کی منادی کے لئے کوئی بدل نہیں ہے۔ کلام کہتا ہے کہ ایمان سننے سے پیدہ ہوتا ہے اور سننا مسیح کے کلام سے (رومیوں 10:17)۔

اس کے علاوہ انجیل کی منادی کے وقت جب وہ دعا کرتے ہیں اور اپنے ایمان کی گواہی دیتے ہیں تو عملی طور سے بھی ہم کو اپنے دوستوں اور خاندان کے ممبران کے ساتھ خڈا پرست مسیحی زندگی کا مظاہرہ کرنا ہوگا تاکہ وہ دیکھ سکیں کہ خدا نے آپکی زندگی میں کس طرح بدلاؤ لیکر آیا ہے (1پطرس2- 3:1)۔ آخر میں ہمارے عزیزوں کی نجات کو خدا پر چھوڑ دینا چاہئے۔ کیونکہ یہ خدا کی قوت اور اس کا فضل ہے جو لوگوں کو بچاتا ہے نہ کہ ہماری کوشش اور محنت۔ سب سے بہتر یہ ہے کہ ہم ان کے لئےدعا کرسکتے ہیں، انہیں گواہی دے سکتے ہیں، اور نمونہ بطور ان کے سامنے ایک خدا پرست مسیحی زندگی گزار سکتے ہیں۔ باقی خدا پر منحصر ہے کہ وہ انہیں ترقی دے سکتا ہے (1 کرنتھیوں 3:6)۔



اردو ہوم پیج میں واپسی



کس طرح میں اپنے دوستوں اور خاندان میں انہیں ٹھوکر کھلائے بغیر یا زبردستی سے مجبور کئے بغیر انجیل کی منادی کرسکتا ہوں؟