دھیان گیان کی (غوروفکر میں محو، سوچ میں ڈُوبی ) دُعا کیا ہے؟


سوال: دھیان گیان کی (غوروفکر میں محو، سوچ میں ڈُوبی ) دُعا کیا ہے؟

جواب:
سب سے پہلے ضروری ہے کہ "دھیان گیان کی دُعا" کی وضاحت کی جائے ۔ دھیان گیان کی دُعا(کنٹمپ لیٹِو پریئر) "دُعا کے دوران صرف "سوچ وبچار "کرنے کی دُعا نہیں ہے۔ بائبل ہمیں ذہن (عقل) سے دُعا کرنے کی ہدایت کرتی ہے (پہلا کرنتھیوں باب 14 آیت 15)، لہذہ واضح طور پر دیکھا جا سکتا ہے کہ دُعا میں دھیان گیان بھی شامل ہے۔ تاہم عقل سے دُعا کرنے کے معنی وہ نہیں ہیں جو دھیان گیان کی دُعا کے معنی بن چُکے ہیں۔ دھیان گیان کی دُعاؤں کے عمل اور مقبولیت میں اُبھرتے ہوئے چرچ کی تحریک کے ظہور کے ساتھ آہستہ آہستہ اضافہ ہو چُکا ہے ، یہ ایک ایسی تحریک ہے جو بہت سے غیر بائبلی نظریات اور رسومات کو مانتی ہے۔

دھیان گیان کی دُعا (کنٹمپ لیٹِو پرئیر) جِسے "مرکزی دُعا (سینٹِرنگ پرئیر)" بھی کہا جاتا ہے، ایک مستغرق عمل ہے جِس میں عامل ایک لفظ پر توجہ مرکوز کرتا ہے اور عمل کی مُدت کے دوران اُس لفظ کو بار بار دہراتا ہے۔ اگرچہ دھیان گیان کی دُعا مختلف گروہوں میں مختلف طریقے سے کی جاتی ہے لیکن اِن میں کچھ مماثلات بھی ہیں۔ دھیان گیان کی دُعا میں خُدا کی حضوری اور عمل کو قبول کرنے کے لئے اپنے مقصد کی علامت کے طور پر ایک مقدس لفظ کا انتخاب کرنا شامل ہے۔ دھیان گیان کی دُعا میں عام طور پر آنکھیں بند کئے آرام سے بیٹھنا، مختصر وقت کے لئے خاموشی سے بیٹھنا، مقدس لفظ کو متعارف کرنا شامل ہیں۔ جب دھیان گیان کی دُعا کرنے والا خیالات سے آگاہ ہو جاتا ہے، تو اُسے مقدس لفط پر دوبارہ سے واپس آنا پڑتا ہے۔

اگرچہ یہ ایک پاک اور جائز عمل معلوم ہو سکتا ہے، لیکن اِس قسم کی دُعا کو بائبل کی کوئی حمایت حاصل نہیں ہے۔ حقیقت میں، یہ بائبل کی وضاحت کردہ دُعا کے برعکس ہے۔ کسی بات کی فِکر نہ کرو بلکہ ہر ایک بات میں تمہاری درخواستیں دُعا اور مِنت کے وسیلہ سے شکرگزاری کے ساتھ خُدا کے سامنے پیش کی جائیں"(فلپیوں باب 4 آیت 6)۔ "اُس دِن تُم مجھ سے کچھ نہ پُوچھو گے۔ میں تُم سے سچ کہتا ہوں کہ اگر باپ سےکچھ مانگو گے تو وہ میرے نام سے تُم کو دے گا۔ اب تک تم نے میرے نام سے کچھ نہیں مانگا۔ مانگو تو پاؤ گے تاکہ تمہاری خوشی پُوری ہو جائے" (یوحنا باب 16 آیات 23تا 24)۔ یہ اور دیگر آیات واضح طور پر دُعا کی خُدا کے ساتھ قابلِ ادراک گفتگو ہونے کے طور پر تصویر کشی کرتی ہیں ، نہ کہ مخفی اور پوشیدہ سوچ وبچار کے طور پر۔

ڈیزائن کے مطابق دھیان گیان کی دُعا خُدا کے ساتھ پوشیدہ تجربہ رکھنے پر توجہ مرکوز کرتی ہے۔ تاہم، تصوف(مِسٹری سِزم) خالص طور پر انفرادی ہے، اور حقیقت یا سچائی پر بھروسہ نہیں کرتا۔ اِس کے باوجود، ہمیں سچائی پر اپنے ایمان، اور اپنی زندگیوں کی بنیاد قائم کرنے کے لئِے خُدا کا کلام دے دیا گیا ہے (دوسرا تھِمُتھیُس باب 3 آیات 16تا 17)۔ خُدا کے بارے میں ہم حقیقت پر مبنی جو کچھ جانتے ہیں، وہ یہ ہے کہ بائبل ریکارڈ کی بجائے تجرباتی علم کو ترجیح دینا ایک شخص کو بائبل کے معیار سے باہر لے جاتا ہے۔

دھیان گیان کی دُعا مشرقی مذاہب اور نئے دور کی بدعات میں استعمال ہونے والی متفکر مشقوں (چِلوں، وِروں)سے مختلف نہیں ہے۔ اِس کے حامی اِس نظریے کو فروغ دیتے ہوئے کہ نجات بہت سے راستوں سے حاصل کی جاتی ہے، تمام مذاہب کے پیروکاروں کے درمیان کھُلی روحانیت کو قبول کرتے ہیں، حالانکہ مسیح نے خود بیان کیا کہ نجات صرف اُس کے وسیلہ سے ہے (یوحنا باب 14 آیت 6)۔ جدید دُعائی تحریک (ماڈرن پریئر موومنٹ) میں عمل ہونے والی دھیان گیان کی دُعا بائبل کی مسیحیت کے خلاف ہے اور یقینی طور پر اِس سے بچنا چاہیے۔

English
اردو ہوم پیج میں واپسی
دھیان گیان کی (غوروفکر میں محو، سوچ میں ڈُوبی ) دُعا کیا ہے؟