ایک مسیحی کے غیر شادی شُدہ رہنے کے بارے میں بائبل کیا فرماتی ہے؟


سوال: ایک مسیحی کے غیر شادی شُدہ رہنے کے بارے میں بائبل کیا فرماتی ہے؟

جواب:
اِس سوال کو اکثر غلط سمجھا جاتا ہے کہ ایک مسیحی کے غیر شادی شُدہ رہنے اور ایمانداروں کے کبھی نہ شادی کرنے کے بارے میں بائبل کیا فرماتی ہے ۔ پولُس پہلا کرنتھیوں باب 7 آیات 7تا 8 میں ہمیں بتاتا ہے، "اور میں تو یہ چاہتا ہوں کہ جیسا میں ہوں ویسے ہی سب آدمی ہوں لیکن ہر ایک کو خُدا کی طرف سے خاص خاص توفیق ملی ہے۔ کسی کو کسی طرح کی۔ کسی کو کسی طرح کی۔ پس میں بے بیاہوں اور بیواؤں کے حق میں یہ کہتا ہوں کہ اُن کے لئے ایسا ہی رہنا اچھا ہے جیسا میں ہوں"۔ غور کریں رسول فرماتا ہے کہ بعض کو غیر شادی شُدہ رہنے کی توفیق ملی ہے اور بعض کو شادی کرنے کی توفیق ملی ہے۔ اگرچہ ایسا لگتا ہے کہ تقریباً ہر ایک شادی کرتا ہے، لیکن یہ ہرگز ضروری نہیں کہ ہر ایک کے بارے میں خُدا کی یہی مرضی ہو۔ مثال کے طور پر، پولُس کو اضافی مسائل، اور مشکلات کے بارے میں فکر کرنے کی ضرورت نہیں تھی جوشادی اور فیملی کے ساتھ آتی ہے۔ اُس نے اپنی ساری زندگی خُدا کے کلام کو پھیلانے کے لئے وقف کر دی تھی۔ اگر وہ شادی کر لیتا تو اتنا مفید رسول نہ ہوتا۔

دوسری جانب، بعض لوگ جوڑے یا خاندان کے طور پر خُدا کی خدمت کرتے ہوئے ٹیم کے طور پر زیادہ بہتر کام کرتے ہیں۔ دونوں اقسام کے لوگ برابر طور پر اہم ہیں۔ غیر شادی شُدہ رہنا گناہ نہیں ہے، یہاں تک کہ پوری زندگی غیر شادی شُدہ رہنا بھی گناہ نہیں ہے۔ زندگی میں سب سے اہم بات شریکِ حیات کی تلاش کرنا اور بچے پیدا کرنا نہیں ہے، بلکہ خُدا کی خدمت کرنا ہے۔ ہمیں بائبل پڑھنے او ر دُعا کرنے کے ذریعہ سے خود کو خُدا کے کلام کے ساتھ تعلیم یافتہ کرنا چاہیے۔ اگر ہم خُدا سے دُعا کریں گے کہ وہ اپنے آپ کو ہم پر ظاہر کرے، تو وہ ضرور جواب دے گا (متی باب 7آیت 7)، اور اگر ہم اُس سے دُعا کریں کہ وہ ہمیں اپنے نیک کاموں کی تکمیل کے لئے استعمال کرے، وہ ضرور استعمال کرے گا۔ "اور اِس جہان کے ہم شکل نہ بنو بلکہ عقل نئی ہو جانے سے اپنی صورت بدلتے جاؤ تاکہ خُدا کی نیک اور پسندیدہ اور کامل مرضی تجربہ سے معلوم کرتے رہو" (رومیوں باب 12 آیت 2)۔

غیر شادی شُدہ ہونے کو لعنت ، یا اِس بات کی علامت کے طور پر نہیں دیکھنا چاہیے کہ غیر شادی شُدہ مرد یا عورت کے ساتھ کچھ تو غلط ہے۔ اگرچہ بہت سے لوگ شادی کرتے ہیں، اور چونکہ بائبل میں یہ ظاہر ہوتا ہے کہ بہت سے لوگوں کے لئے خُدا کی مرضی ہے کہ وہ شادی کریں، لیکن ایک غیر شادی شُدہ مسیحی کسی بھی مفہوم میں "سیکنڈ کلاس" مسیحی نہیں ہے۔ جیسا کہ پہلا کرنتھیوں باب سات سے ظاہر ہوتا ہے کہ غیر شادی شُدہ رہنا بہت بڑی بُلاہٹ ہے۔ جیسے زندگی میں باقی چیزوں کے لئے خُدا کی حکمت مانگتے ہیں، ویسے ہی شادی کے بارے میں بھی خُدا کی حکمت مانگنی چاہیے (یعقوب پہلا باب آیت 5)۔ خُدا کے منصوبہ کی پیروری کرنے کا نتیجہ بارآوری اور خوشی ہو گا جو خُدا ہمارے لئے چاہتا ہے، چاہے یہ منصوبہ شادی شُدہ ہونے کے بارے میں ہو یا غیر شادی شُدہ ہونے کے بارے میں۔

English
اردو ہوم پیج میں واپسی
ایک مسیحی کے غیر شادی شُدہ رہنے کے بارے میں بائبل کیا فرماتی ہے؟