کیا کسی مسیحی کو ماہر نفسیات (سائے کولوجِسٹ/سائے کیٹرِسٹ) کے پاس جانا چاہے؟



سوال: کیا کسی مسیحی کو ماہر نفسیات (سائے کولوجِسٹ/سائے کیٹرِسٹ) کے پاس جانا چاہے؟

جواب:
ماہر نفسیات (سائے کولوجِسٹ/سائے کیٹرِسٹ) پیشہ ور ہیں، جو ذہنی صحت کے میدان میں کام کرتے ہیں۔ لوگ اکثر اپنے کرداروں کوماہر نفسیات (سائے کولوجِسٹ/سائے کیٹرِسٹ) یا ذہنی صحت کے مشیروں جیسے دوسرے ذہنی صحت کے پیشوں کے ساتھ اُلجھاتے یا ملاتے ہیں۔ ذہنی صحت کے پیشہ وروں کی بہت سی حالتیں ہوتی ہیں جو کئی مختلف تعلیمی راستوں کا مطالبہ کرتی ہیں اور علاج کے بہت سے طریقے استعمال کرتی ہیں۔ سائے کولوجِسٹ کو نفسیات میں پی۔ایچ۔ڈی کرنا اور بنیادی طور پر تحقیق کرنے ، کالج لیول پر سکھانے ، اور پرائیوٹ مشاورت کے طریقوں کو برقرار رکھنے میں توجہ مرکوز کرنا ضروری ہوتا ہے۔ وہ بہت سنجیدہ اور جذباتی تشخیص کے لئے بھی جانچ کر سکتے ہیں ۔ سائے کیٹرِسٹ اصل میں ایک طبی ڈاکٹر ہے جو دماغی خرابیوں میں مہارت رکھتا ہے۔ سائے کیٹرِسٹ صرف ذہنی صحت کے پیشہ ور افراد ہیں جو دوا دینے کے قابل ہیں اور دماغی صحت کے لئے ادویات کےعلاج میں تربیت یافتہ ہوتے ہیں۔

جب لوگ ڈِسلیکسیا (ایک دماغی بیماری جو انسان کے لئے پڑھنا لکھنا مشکل بنا دیتی ہے)، یا مشاورت کی جانچ جیسی خدمات کی ضرورت محسوس کرتے ہیں، تو وہ ماہر نفسیات (سائے کولوجِسٹ) کے پاس جانے کا سوچ سکتے ہیں۔اِس سے پہلے کہ لوگ سائے کیٹرِسٹ کے پاس بھیجے جائیں، لوگ عام طور پر سائے کولوجِسٹ یا دوسرے مشاورتی پیشہ ور کے پاس جاتے ہیں ۔ کچھ سائے کیٹرِسٹ مشوروں پر عمل کرتے ہیں، لیکن دوسرے تھراپی انجام دینے والے دیگر پیشہ ور افراد کے ساتھ شراکت کرتے ہوئے صرف ادوایات کی آگاہی کرتے اور انتظام سنبھالتے ہیں۔ جیسا کہ کسی بھی پیشہ میں ہوتا ہے، کچھ سائے کولوجِسٹ/سائے کیٹرِسٹ مسیحی ہوں گے ، اور کچھ نہیں ۔

مسیحی عام طور پر جاننا چاہتے ہیں کہ بائبل اِن پیشوں کو کیسے بیان کرتی ہے۔ حقیقت یہ ہے کہ گناہ آلودہ مفہوم میں نہ ہی سائے کولوجی اور نہ سائے کیٹری غلط ہے۔ دونوں درُست اور مددگار مقاصد کے لئے استعمال ہوتی ہیں۔ ذہنی صحت کے کسی بھی پیشہ ور کے پاس قابلیت نہیں ہے کہ وہ مکمل طور پر سمجھ سکے کہ خُدا نے انسان کو کیسے بنایا، ذہن کیسے کام کرتا ہے، اور ہم جو کرتے ہیں وہ کیوں کرتے ہیں اور محسوس کیوں کرتے ہیں۔ اگرچہ ذہنی اور جذباتی مسائل کے بارے میں دُنیاوی ، اور انسان مرکز نظریات کی بہتات ہے، لیکن بہت سے خُدا پرست لوگ بھی اِن پیشوں میں شامل ہیں جو انسانی ذہن کو بائبل کے نقطہ نظر سے سمجھنے کی کوشش کرتے ہیں۔ مسیحیوں کے لئے، ایسے پیشہ ور کی تلاش کرنا بہتر ہے جو ایماندار ہونے کا مظاہرہ کرتے ہیں، کتابِ مقدس کے علم کو ظاہر کر سکتے ہیں، اور خُدا پرست کردار کا اظہار کرتے ہیں۔ ہمیں ہر مشورے کو بائبل کے ذریعہ فلٹر کرنا چاہیے تاکہ دُنیا کی ہر چیز کے بارے میں ہم سمجھ سکیں کہ درُست کیا ہے اور غلط کیا ہے۔

سائےکولوجِسٹ یا سائےکیٹرِسٹ کے پاس جانا غلط نہیں ہے۔ تاہم، ذہنی صحت کے پیشہ ور مختلف عقائد اور پسِ منظر سے آتے ہیں۔ یہاں تک کہ مسیحی سائے کولوجِسٹ اور سائے کیٹرِسٹ بھی صحیح جواب نہیں دے پائیں گے، یا وہ بائبل کے علم کی کچھ باتوں میں کمزور ہو سکتے ہیں۔ یاد رکھیں اُن سب سوالوں کا پہلا جواب خُدا کا کلام ہی ہے جو ہمیں تکلیف دیتے ہیں۔ حقیقت کے ساتھ لیس ہونا یہ سمجھنے کے لئے نہایت ضروری ہے کہ ہمارے لئے کیا مفید ہے اور کونسی چیزیں ہمیں گمراہی کی طرف لے کر جا سکتی ہیں (افسیوں باب 6 آیات 11تا 17؛ پہلا کرنتھیوں دوسرا باب آیات 15 تا 16)۔ ذاتی طور پر ہر ایماندار اپنی شخصی ترقی اور سمجھ بوجھ کے لئے بائبل کا مطالعہ کرنے کا ذمہ دار ہے۔ روح القدس ہمیں یسوع مسیح کے صورت میں تبدیل کرنے کے لئے کلام کو استعمال کرے گا، جو کہ تمام مسیحیوں کا حتمی مقصد ہے (افسیوں باب 5 پہلی دو آیات؛ کلسیوں باب 3 آیت 3)۔

English



اردو ہوم پیج میں واپسی



کیا کسی مسیحی کو ماہر نفسیات (سائے کولوجِسٹ/سائے کیٹرِسٹ) کے پاس جانا چاہے؟