کیا ایک مسیحی نجات کھو سکتا ہے؟



سوال: کیا ایک مسیحی نجات کھو سکتا ہے؟

جواب:
سب سے پہلے "مسیحی" اصطلاح کی وضاحت ہونی چاہیے۔ ایک "مسیحی" ایساشخص نہیں ہے جو مسیحی گھرانے میں پروان چڑھا ہو اور دُعا کرتا اور چرچ جاتا ہو۔ اگرچہ یہ سب باتیں مسیحی تجربہ کا ایک حصہ ہو سکتی ہیں۔ لیکن اِن باتوں سے کوئی مسیحی نہیں بنتا۔ ایک مسیحی ایسا شخص ہے جو یسوع مسیح پر واحد نجات دہندہ کے طور پر کامل بھروسہ کرتا ہے اور روح القدس سے معمور ہے (یوحنا۱۶:۳؛اعمال۳۱:۱۶؛افسیوں۸:۲۔۹)۔

لہذہ، اِس وضاحت کو ذہن میں رکھتے ہوئے، کیا مسیحی نجات کھو سکتا ہے؟یہ ایک انتہائی اہم سوال ہے۔ شاید اِس کا جواب دینے کا بہترین طریقہ یہ جانچنا ہےکہ بائبل کے مطابق نجات پاتے وقت کیا ہوتا ہے، اور اِس بات کا مطالعہ کرنا ہے کہ نجات کھونے میں کون سی باتیں شامل ہیں۔

ایک مسیحی نیا مخلوق ہے۔ "اِس لئے اگر کوئی مسیح میں ہے تو وہ نیا مخلوق ہے۔ پُرانی چیزیں جاتی رہیں۔ دیکھو وہ نئی ہو گئیں"(۲۔کرنتھیوں۱۷:۵)۔ ایک مسیحی صرف ایک "بہتر کیا گیا" شخص نہیں ہے۔ مسیحی مکمل طورپر نیا مخلوق ہے۔ وہ "مسیح میں" ہے۔ ایک مسیحی کے لئے نجات کھونا، نئے مخلوق کو مسخ کرنا ہے۔

ایک مسیحی کا فدیہ دیا گیا ہے۔ "کیونکہ تم جانتے ہو کہ تمہارا نکمّا چال چلن جو باپ دادا سے چلا آتا تھا اُس سے تمہاری خلاصی فانی چیزوں یعنی سونے چاندی کے ذریعہ سے نہیں ہوئی۔ بلکہ ایک بے عیب اور بے داغ برّے یعنی مسیح کے بیش قیمت خون سے" (۱۔پطرس۱۸:۱۔۱۹)۔ لفظ "فدیہ" کسی چیز کو خریدنے، یا ادا کی گئی قیمت کو پیش کرتا ہے۔ ہمیں مسیح کی موت کی قیمت ادا کر کے خریدا گیا ہے۔ ایک مسیحی کے لئے نجات کھونا، خود خُدا کا کسی شخص کی خریدداری کو منسوخ (باطل) کرنا ہے، جس کے لئے یسوع کے قیمتی خون کی قیمت چکائی گئی تھی۔

ایک مسیحی راستباز ٹھہرایا گیا ہے۔ "پس جب ہم ایمان سے راستباز ٹھہرے تو خُدا کے ساتھ اپنے خُداوند یسوع مسیح کے وسیلہ سے صُلح رکھیں"(رومیوں۱:۵)۔ جنتوں نے یسوع مسیح کو نجات دہندہ کے طور پر قبول کیا ہے وہ خُدا کے سامنے راستباز ٹھہرائے گئے ہیں۔ ایک مسیحی کے لئے نجات کھونا، خُدا کا خود اپنے الفاظ واپس لینا ہے اور جنکو اُس نے پہلے راستباز (ڈِکلیئر) کیا تھا اُنہیں (اَن ڈِکلیئر) کرنا ہے۔ جن کے گناہ بخشے گئے تھے اُنکو دوبارہ مجرم ٹھہرانا ہے۔جس سزا کو خُدا نے اپنے الٰہی تخت سے ختم کیا تھا اُس سزا کو دوبارہ لاگو کرنا ہے ۔

ایک مسیحی کے ساتھ ابدی زندگی کا وعدہ کیا گیا ہے۔ "کیونکہ خُدا نے دُنیا سے ایسی محبت رکھی کہ اپنا اکلوتا بیٹا بخش دیا تاکہ جو کوئی اُس پر ایمان لائے ہلاک نہ ہو بلکہ ہمیشہ کی زندگی پائے" (یوحنا۱۶:۳)۔ ابدی زندگی فردوس میں خُدا کے ساتھ ہمیشہ کی زندگی گزارنے کا وعدہ ہے۔ خُدا وعدہ کرتا ہے، "ایمان لا تو تُو ہمیشہ کی زندگی پائے گا"۔ ایک مسیحی کے لئے نجات کھونا، لفظ "ابدی زندگی" کی نئے سرے سے تعریف کرنا ہے۔ ایک مسیحی کے ساتھ ہمیشہ کی زندگی گزارنے کا وعدہ کیا گیا ہے۔ کیا ہمیشہ کے معنی " ہمیشہ " نہیں ہیں؟

ایک مسیحی کو خُدا کی طرف سے نشان دیا گیا ہے اور روح القدس کی طرف سے مُہر کی گئی ہے۔ "اور اُسی میں تم پر بھی جب تم نے کلامِ حق کو سُنا جو تمہاری نجات کی خوشخبری ہے اور اُس پر ایمان لائے پاک موعُودہ روح کی مُہر لگی۔ وہی خُدا کی ملکیت کی مخلصی کے لئے ہماری میراث کا بیعانہ ہے تاکہ اُس کے جلال کی ستائش ہو" (افسیوں۱۳:۱۔۱۴)۔ ایمان لاتےوقت، نئے مسیحی پر روح القدس کی مُہر کی جاتی ہے، جِس کا وعدہ کیا گیا تھا اور جو آسمانی وراثت کی ضمانت کے طور پر بخشا گیا ہے۔ آخر نتیجہ یہ ہے کہ خُدا کے جلال کی ستائش ہوتی ہے۔ ایک مسیحی کے لئےنجات کھونا، خُدا کے لئے اپنے لگائے گئے نشان کو مٹانا، روح القدس کو واپس لینا، ضمانت کو منسوخ (باطل) کرنا، وراثت کو منتقل نہ کرنا، ستائش سے انکار کرنا، اور اپنے جلال کو کم کرنا ہے۔

ایک مسیحی کو جلال کی ضمانت دی گئی ہے۔ "اور جن کو اُس نے پہلے سے مقرر کیا اُن کو بُلایا بھی اور جن کو بُلایا اُن کو راستباز بھی ٹھہرایا اور جنکو راسباز ٹھہرایا اُن کو جلال بھی بخشا" (رومیوں۳۰:۸)۔ رومیوں۱:۵ کے مطابق ہمیں راستبازی اُسی وقت مل جاتی ہے جب ہم ایمان لاتے ہیں۔ جن کو خُدا راستباز ٹھہراتا ہے اُن کے ساتھ جلال کا وعدہ کرتا ہے۔ یہ وعدہ اُس وقت پورا ہو گا جب مسیحی جی اٹھنے کے بعد جلالی جسم کے ساتھ فردوس میں ہوں گے۔ اگر ایک مسیحی نجات کھو سکتا ہے، پھر رومیوں۳۰:۸ میں غلطی پائی جاتی ہے،اگر ایک مسیحی نجات کھو سکتا ہے تو خُدا اُن سب کو جلال کی ضمانت نہیں دے سکتا جن کو اُس نے پہلے سے مقرر کیا، بُلایا، اور راستباز بھی ٹھہرایا۔

ایک مسیحی نجات نہیں کھو سکتا۔اگر ہم نجات کھو سکتے ہیں تو بہت سی باتیں جن کے بارے میں بائبل بیان کرتی ہے کہ جب ہم یسوع پر ایمان لاتے ہیں تو ہمارے ساتھ واقع ہوتی ہیں، باطل ہو جائیں گی ۔ نجات خُدا کا تحفہ (نعمت) ہے۔ اور خُدا کے نعمتیں بے تبدیل ہیں (رومیوں۲۹:۱۱)۔ ایک مسیح کے نئے ہونے کو منسوخ (باطل) نہیں کیا جا سکتا۔ خریدے گئے غیر خریدے نہیں ہو سکتے۔ ابدی زندگی عارضی نہیں ہو سکتی۔ خُدا اپنے الفاظ واپس نہیں لے سکتا۔ بائبل بیان کرتی ہے کہ خُدا جھوٹ نہیں بول سکتا (طِطُس۲:۱)۔

ایک مسیحی نجات نہیں کھو سکتا۔ اِس عقیدہ کے خلاف عام طور پر کئے جانے والے اعتراضات کا تعلق اِن مسائل کے ساتھ ہے: ۱)اُن مسیحیوں کے بارے میں کیا خیال ہے جو گناہ آلودہ اور غیر توبہ یافتہ طرِز زندگی رکھتے ہیں؟ ۲)اُن مسیحیوں کا کیا ہوتا ہے جو ایمان کو ردّ کرتے اور مسیح کا انکار کرتے ہیں؟ اِن اعتراضات کا مسلہ یہ فرض کرنا ہے کہ ہر ایک جو "مسیحی" ہونے کا دعویٰ کرتا ہے حقیقت میں نئے سِرے سے پیدا ہوا مسیحی ہے۔ بائبل بیان کرتی ہےکہ ایک مسیحی مسلسل، غیر توبہ یافتہ گناہ کی حالت میں زندگی نہیں گزارتا (۱۔یوحنا۶:۳)۔ بائبل یہ بھی بیان کرتی ہے کہ ہر وہ شخص جو ایمان سے دستبردار ہوتا ہے ثابت کرتا ہے کہ وہ حقیقت میں مسیحی تھا ہی نہیں (۱۔یوحنا۱۹:۲)۔ ہو سکتا ہے وہ مذہبی لگتا ہو، ہو سکتا ہے کہ اُس نے اچھائی کا لبادہ پہنا ہو، لیکن وہ خُدا کی قدرت سے نئے سِرے سے پیدا نہیں ہوا ہوتا۔ "کیونکہ تم اُن کو اُن کے پھلوں سے پہچان لو گے" (متی۱۶:۷)۔ خُدا کے خریدے گئے لوگوں کا تعلق اِس حقیقت سے ہے "پس اے بھائیو! تم بھی مسیح کے بدن کے وسیلہ سے شریعت کے اعتبار سے اِس لئے مُردہ بن گئے کہ اُس دوسرے کے ہو جاؤ جو مُردوں میں سے جِلایا گیا تاکہ ہم سب خُدا کے لئے پھل پیدا کریں" (رومیوں۴:۷)۔

خُدا کے فرزند کو کوئی چیز باپ کی محبت سے جُدا نہیں کر سکتی (رومیوں۳۸:۸۔۳۹)۔ ایک مسیحی کو خُدا کے ہاتھ سے کوئی بھی چھین نہیں سکتا (یوحنا۲۸:۱۰۔۲۹)۔ خُدا ابدی زندگی کی ضمانت دیتا ہے اور جو نجات ہمیں بخشتا ہے اُس کو برقرار بھی رکھتا ہے۔ اچھا چرواہا کھوئی ہوئی بھیڑوں کی تلاش کرتا ہے، اور "پھر جب مِل جاتی ہے تو وہ خوش ہو کر کندھے پر اُٹھا لیتا ہے اور گھر چلا جاتا ہے" (لوقا۵:۱۵۔۶)۔ جب بھیڑ مل جاتی ہے، تو چرواہا خوشی سے بوجھ اُٹھاتا ہے؛ ہمارا خداوند کھوئے ہوئے کو محفوظ طریقے سے گھر لانے کی مکمل ذمہ داری لیتا ہے۔

مزید یہوداہ ۲۴۔۲۵ ہمارے خُداوند کی وفاداری اور نیکی پر زور دیتی ہے: "اب جو تم کو ٹھوکر کھانے سے بچا سکتا ہے اور اپنے پُر جلال حضور میں کمال خوشی کے ساتھ بے عیب کر کے کھڑا کر سکتا ہے۔ اُس خُدایِ واحد کا جو ہمارا مُنجّی ہے جلال اور عظمت اور سلطنت اور اختیار ہمارے خُداوند یسوع مسیح کے وسیلہ سے جیسا ازل سے ہے اب بھی ہو اور ابدُالاآباد رہے۔ آمین"۔

English



اردو ہوم پیج میں واپسی



کیا ایک مسیحی نجات کھو سکتا ہے؟