مسیحی فرقے بہت زیادہ کیوں ہیں؟


سوال: مسیحی فرقے بہت زیادہ کیوں ہیں؟

جواب:
اِس سوال کا جواب دینے سے پہلے، ہمیں سب سے پہلے مسیح کے بدن میں موجود فرقوں اور غیر مسیحی بدعات اور جھوٹے مذاہب کے درمیان فرق کرنا ضروری ہے۔ پریسبٹیرین Presbyterians اور Lutherans مسیحی فرقوں کی مثالیں ہیں۔ مورمنز Mormons اورJehovah's Witnesses یہواہ وِٹنسسز بدعات (وہ فرقے جو مسیحی ہونے کا دعویٰ تو کرتے ہیں لیکن مسیحی ایمان کے ایک یا زیادہ عقائد کا انکار کرتے ہیں) کی مثالیں ہیں۔ اِسلام اور بُدھ مت مکمل طور پر الگ مذاہب ہیں۔

مسیحی ایمان میں سے فرقوں کے اُبھرنے کا سُراغ 16ویں صدی کے دوران رومن کیتھولک چرچ کی تحریک اصلاح، پروٹسٹنٹ ریفرمیشن سے لگایا جا سکتا ہے، جس میں سے پروٹسٹنٹ ازم کے چار بڑے حصے، لوتھرن، ریفامڈ، اینا بپٹسٹ، اور اینگلیکن چرچ نے جنم لیا۔ اِن چار میں سے مزید اور فرقوں کا اضافہ ہوا۔

لوتھرنLutheran فرقہ کا نام مارٹن لوتھر کے نام پہ رکھا گیا اور اِس کی بنیاد اُس کی تعلیمات پر رکھی گئی تھی۔ میتھوڈِسٹ Methodists نے اپنے بانی جان ویسلے John Wesley سے نام حاصل کیا جو کہ روحانی ترقی کے لئے "میتھڈ" یعنی طریقے پیش کرنے کی وجہ سے مشہور تھا۔ پریسبٹیرین کا نام چرچ کی قیادت پر اُن کے عقیدہ کی وجہ سے رکھا گیا ہے، ایلڈر کے لئے یونانی لفظ پریسبیٹروس Presbyteros ہے۔ بپٹسٹ نے یہ نام اِس لئے حاصل کیا کیونکہ وہ ہمیشہ بپتسمہ کی اہمیت پر زور دیتے ہیں۔ ہر ایک فرقہ معمولی فرق رکھتا ہے یا معمولی طور پر تعلیمی اختلافات پر زیادہ زور دیتا ہے، جیسا کہ بپتسمہ کے طریقہ ، عشائے ربانی کی دستیابی سب کے لئے یا صرف اُن کے لئے جن کی گواہی کلیسیا کے رہمنا دیتے ہیں، نجات کے معاملے میں خُدا کی خود مختاری یا آزاد مرضی، اسرائیل کا مستقبل اور کلیسیا، بڑی مصیبتوں سے پہلے یا مصیبتوں کے بعد کلیسیا کا اُٹھایا جانا، نعمتوں نشانوں کا موقوف ہونا یا ابھی بھی جاری ہیں وغیرہ۔ اِن اختلافِ رائے کا نقطہ کبھی بھی مسیح بطورِ خُداوند اور نجات دہندہ نہیں رہا، بلکہ خُدا پرست، لیکن کم سمجھ دار، لوگوں کی وجہ سے خُدا کو جلال دینے ، اور خُدا کےکلام کے بارے میں اپنی سمجھ بُوجھ اور شعور کی بنا پر پاکیزگی کو قائم کرنے کی کوشش میں یہ فرقے معرض وجود میں آئے۔

آج بہت سے اور مختلف فرقے دیکھنے کو ملتے ہیں۔ مذکورہ بالا اصل "مین لائن" فرقوں نے اسمبلیز آف گارڈ، کرسچن اینڈ مشنری الائنس، نازرینز، ایونجیکل فری، اِنڈیپنڈنٹ بائبل چرچز، اور بہت سی شاخوں کو جنم دیا ہے۔ کچھ فرقہ جات معمولی نظریاتی اختلافات پر زور دیتے ہیں، لیکن زیادہ تر مسیحیوں کے مختلف ذائقہ اور ترجیحات کو پورا کرنے کی غرض سے عبادت کے مختلف انداز پیش کرتے ہیں۔ لیکن ایماندار ہونے کے ناطے غلطی مت کریں، ہمارا ذہن ایمان کے عقائد پر ایک ہونا چاہیے، لیکن اِس کے برعکس جغرافیائی بحث ہوتی ہے کہ مسیحیوں کو اجتمائی طور پر کیسے عبادت کرنی چاہیے۔ یہ جغرافیہ ہی ہے جو بہتوں کے لئے مسیحیت کے مختلف "ذائقہ" کا سبب بنتا ہے۔ یوگنڈا میں موجود ایک پریسبٹیرین چرچ کا عبادتی انداز کالاریڈو Colorado میں موجود پریسبٹیرین چرچ کے عبادت کرنے کے انداز سے بہت مختلف ہو گا، لیکن اُن کی تعلیمات کا زیادہ تر حصہ ایک جیسا ہی ہو گا۔ تنُوع اچھی چیز ہے، لیکن عدمِ اتفاق اچھی چیز نہیں ہے۔ اگر دو چرچز تعلیمی اختلافِ رائے رکھتے ہیں، تو کلام کی بحث و تکرار کے لئے بُلایا جا سکتا ہے۔ اِس قسم کے "لوہے کا لوہے کو تیز کرنا" (امثال17:27) فائدہ مند ہے۔ اگر وہ عبادت کے انداز اور وضع پر اختلافِ رائے رکھتے ہیں، تو اُن کا الگ رہنا ہی بہتر ہے۔ بشرطیکہ ، یہ جُدائی مسیحیوں کی ایک دوسرے سے محبت کرنے(1یوحنا12-11:4)، اور مسیح میں ایک بدن کے طور پر متحد ہونے کی ذمہ داری ختم نہ کرے(یوحنا22-21:17)۔

English
اردو ہوم پیج میں واپسی
مسیحی فرقے بہت زیادہ کیوں ہیں؟