مکاشفہ (اپاکلِپس) کیا ہے؟


سوال: مکاشفہ (اپاکلِپس) کیا ہے؟

جواب:
لفظ "اپاکلِپس" یونا نی لفظ "apocalupsis" سے نکلا ہےجس کے معنی "ظاہر کرنا، واضح کرنا، یا پردہ ہٹانے" کے ہیں۔ مکاشفہ کی کتاب بعض اوقات "یوحنا کے مکاشفات" کا حوالہ دیتی ہے کیونکہ خُدا یوحنا پر آخری دور کو ظاہر کر رہا تھا۔ مزید، "اپاکلِپس" کے لئے یونانی لفظ مکاشفہ کی کتاب کے یونانی متن میں سب سے پہلے استعمال ہونے والا لفظ ہے۔ "اپاکلِپٹِک لِٹریچر یعنی مکاشفاتی ادب" جملہ علامات، تصاویر، اور مستقبل کے واقعات کے نمبر بیان کرنے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔بائبل میں مکاشفہ کی کتاب کے علاوہ اپاکلِپٹک لِٹریچر کی مثالیں دانی ایل12-7، یسعیاہ27-24 ابواب، حزقی ایل41-37 ابواب، اور زکریاہ12-9میں ملتی ہیں۔

مکاشفاتی ادب علامتی اور تشبیہی زُبان میں کیوں لکھا گیا؟ مکاشفاتی کُتب تب لکھی گئی جب پیغام کوسادہ زُبان میں پیش کرنے کی بجائے علامتی اور تشبیہی رُوپ میں پیش کیا جاتا تھا۔ اِس کے علاوہ، کُنائیت نے وقت اور جگہ کی معلومات کے بارے میں ایک عُنصر پیدا کیا۔ تاہم ایسے علامتی انداز کا مقصد اُلجھن پیدا کرنا نہیں تھا، بلکہ مشکل وقت میں خُدا کے پیروکاروں کو ہدایت کرنا اور اُنکی حوصلہ افزائی کرنا تھا۔

بائبلی معانی کے علاوہ، اصطلاح "مکاشفہ" اکثر عام طور پر آخری دور ، یا خاص طور پر آخری دور تک کے واقعات کو پیش کرنے کے لئے استعمال کی جاتی ہے۔ آخری دور کے واقعات جیسا کہ یسوع کی دوسری آمد اور ہرمجدون کی جنگ بعض اوقات مکاشفہ کے طور پر پیش کی جاتی ہیں۔ مکاشفہ خُدا کا، اُس کے غضب کا، اُس کے انصاف کا، اور آخر کار اُس کی محبت کا حتمی اظہار ہے۔ یسوع مسیح خُدا کا سب سے بڑا "مکاشفہ" ہے، کیونکہ اُس نے خُدا کو ہم پر ظاہر کیا (یوحنا9:14؛ عبرانیوں2:1)۔

English
اردو ہوم پیج میں واپسی
مکاشفہ (اپاکلِپس) کیا ہے؟