144,000ایک لاکھ چوالیس ہزار کون ہیں؟


سوال: 144,000ایک لاکھ چوالیس ہزار کون ہیں؟

جواب:
مکاشفہ کی کتاب ہمیشہ مفسرین کو چلینج پیش کرتی ہے۔ یہ کتاب تخیلات اور علامتوں سے بھری ہوئی ہے جن کے بارے میں لوگوں نے اپنے قائم شُدہ تصورات کے مطابق مختلف تشریحات پیش کی ہیں۔ مکاشفہ کی کتاب کے واقعات کے پورا ہونے کے بارے میں عام طور پر چار بنیادی تفسیری نقطہ نظر پیش کئے جاتے ہیں۔ (1 پریٹراِسٹ (اِن کا ماننا ہے کہ مکاشفہ کی کتاب کے تمام تر یا زیادہ تر واقعات پہلی صدی کے آخر تک ہی پورے ہو چُکے تھے)؛ (2 ہسٹوری سِسٹ (جو مکاشفہ کی کتاب کو رسولی دور سے موجودہ دور تک کلیسیا کی تاریخ کا سروے مانتے ہیں)؛ (3 آئیڈیل اِسٹ (جو مکاشف کی کتاب کو اچھائی اور بُرائی کے درمیان جدوجہد کی تصویر کشی مانتے ہیں)؛ (4 فیوچراِسٹ (جن کے نزدیک مکاشفہ کی کتاب مستقبل میں ہونے والے واقعات کی نبوتی کتاب ہے)۔ اِن چاروں میں سے صرف فیوچر اِسٹ تفسیری نقطہ نظر ہے جو مکاشفہ کی کتاب کی تفسیر بائبل کی باقی کتابوں کی طرح گرائمر کے مطابق اور تاریخی طور پر کرتا ہے۔ یہ نظریہ مکاشفہ کی کتاب کے اپنے نبوتی دعویٰ پر بھی پورا اُترتا ہے (مکاشفہ 3:1؛ 7:22،10، 18، 19)

لہذہ، سوال "ایک لاکھ چوالیس ہزار کون ہیں؟" کے جواب کا انحصار اِس بات پر ہے کہ آپ کونسے تفسیری طریقے کا انتخاب کرتے ہیں۔ فیوچر اِسٹ (مستقبل کے ماننے والوں) کے علاوہ تمام طریقہ کار ایک لاکھ چوالیس ہزار کی تفسیر علامتی طور پر کرتے ہیں، اُن کے نزدیک ایک لاکھ چوالیس ہزار مقدسین کلیسیا کی مکمل تعداد کی علامت ہوتے ہوئے کلیسیا کی نمائیدگی کرتے ہیں۔ اِس کے علاوہ جب ہم غور کرتے ہیں، "اور جن پر مُہر کی گئی میں نے اُن کا شُمار سُنا کہ بنی اسرائیل کے سب قبیلوں میں سے ایک لاکھ چوالیس ہزار پر مُہر کی گئی" (مکاشفہ4:7) اِس حوالہ میں کچھ بھی ایسا نہیں ہے جس کی بنا پر ایک لاکھ چوالیس ہزار مقدسین کی تشریح "بنی اسرائیل" کے ہر قبیلہ میں سے لئے گئے بارہ ہزار مقدسین کے علاوہ کی جائے۔ نیا عہد نامہ کلیسیا کے اسرائیل کی جگہ لینے کے بارے میں کوئی واضح متن پیش نہیں کرتا۔

اِن یہودیوں پر مُہر کی گئی ہے جس کا مطلب ہے کہ وہ خُدا کی الٰہی عدالت اور بڑی مصیبتوں کے دوران مخالفِ مسیح کے منصوبوں سے خاص طور پر محفوظ کئے گئے ہیں (مکاشفہ 17:6دیکھیں جس میں آپ حیران ہوں گے کہ آنے والے غضب کے سامنے کون کھڑا رہ سکتا ہے)۔ مصیبتوں کا دور مستقبل کا سات سالہ دور ہے جس میں خُدا اُن لوگوں کی عدالت کرے گا جو اُس کو ردّ کرتے ہیں اور اسرائیل قوم کے لئے نجات کے منصوبہ کو پورا کرے گا۔ یہ سب کچھ دانی ایل کے نبوتی مکاشفہ کے مطابق ہو گا (دانی ایل :9 27-24)۔ ایک لاکھ چوالیس ہزار اسرائیل کے خریدے گئے یہودیوں کے "پہلے پھل" کی ایک قسم ہیں (مکاشفہ4:14) جن کے بارے میں پہلے سے ہی پیشن گوئیاں کی گئی تھیں (زکریاہ10:12؛ رومیوں11: 25- 27)، اور اُن کا مقصد کلیسیا کے اُٹھائے جانے کے بعدبڑی مصیبتوں کے دور میں دُنیا میں انجیل کی مُنادی کرنا ہے۔ اُن کی خدمت کے نتیجہ میں لاکھوں لوگ مسیح پر ایمان لائیں گے، "اِن باتوں کے بعد جو میں نے نگاہ کی تو کیا دیکھتا ہوں کہ ہر ایک قوم اور قبیلہ اور اُمّت اور اہل زُبان کی ایک ایسی بڑی بھِیڑ جِسے کوئی شُمار نہیں کر سکتا سفید جامے پہنے اورکھجُور کی ڈالیاں اپنے ہاتھوں میں لئے ہوئے تخت اور برّہ کے آگے کھڑی ہے" (مکاشفہ9:7)۔

ایک لاکھ چوالیس ہزار کے بارے میں زیادہ تر اُلجھن یہوواہ وِٹنسز کی غلط تعلیمات کا نتیجہ ہے۔ یہوواہ وِٹنسز دعویٰ کرتے ہیں کہ صرف ایک لاکھ چوالیس ہزار لوگوں کی حتمی تعداد ہی آسمان پر خُدا کے ساتھ بادشاہی کرے گی اور ہمیشہ تک خُدا کے ساتھ رہے گی ۔ یہوواہ کے گواہوں کے مطابق ایک لاکھ چوالیس ہزار ہی آسمان کی بادشاہی کے وارث ہوں گے۔ جو لوگ ایک لاکھ چوالیس میں شامل نہیں وہ زمین ( مسیح اور ایک لاکھ چوالیس ہزار کی حکمرانی میں زمینی جنت) کے وارث ہوں گے۔ ہم واضح طور پر دیکھ سکتے ہیں کہ یہوواہ وِٹنسز کی تعلیم موت کے بعد بھی ایک حکمران طبقے(ایک لاکھ چوالیس ہزار) اور باقی مقدسین میں اُونچ نیچ پر مبنی معاشرہ قائم کرتی ہے۔ بائبل مقدس ایسی "دہری حثییت" کی تعلیم نہیں سکھاتی۔ یہ سچ ہے کہ لوگ ایک ہزار سالہ بادشاہت میں مسیح کے ساتھ بادشاہی کریں گے۔ اِن لوگوں میں کلیسیا (مسیح پر ایمان لانے والے مقدسین، 1کرنتھیوں2:6)، پُرانے عہد نامے کے مقدسین (ایماندار جو یسوع کی پہلی آمد سے پہلے مر گئے، دانی ایل 27:7)، اور بڑی مصیبتوں کے دور کے مقدسین (وہ جو مصیبتوں کے دور میں مسیح کو قبول کریں گے، مکاشفہ4:20) شامل ہیں۔ پھر بھی بائبل میں اِس گروپ کے لوگوں کے بارے میں عددی حدبندی نہیں ملتی۔ مزید، ایک ہزار سالہ دور ابدیت سے مختلف ہے، جو کہ ایک ہزار سالہ دور کے پورے ہونے سے ہی شروع ہو جائے گی۔ اُس وقت خُدا نئے یروشلیم میں ہمارے ساتھ رہے گا۔ وہ ہمارا خُدا ہو گا اور ہم اُس کے لوگ ہوں گے (مکاشفہ3:21)۔ ہم سے وعدہ کی گئی ، اور روح القدس سے مُہر کی گئی وراثت (افسیوں:1 14-13) ہماری ہو گی، اور ہم مسیح کے ساتھ ہم میراث ہوں گے (رومیوں17:8)۔

English
اردو ہوم پیج میں واپسی
144,000ایک لاکھ چوالیس ہزار کون ہیں؟