كيا نجات صرف ايمان کے ذريعے هےياپھر ايمان كے ساتھ اعمال بھي ضروری ہیں؟




سوال: كيا نجات صرف ايمان کے ذريعے هےياپھر ايمان كے ساتھ اعمال بھي ضروری ہیں؟

جواب:
یه شاید مسیحی مذهب کا سب سے اهم سوال هے۔ اس سوال کی وجه اصلاح عمل هے یه پروٹسٹنٹ کلیسیا اور کتھولک کلیسیا کے درمیان فرق هے۔ یه سوال ایک بنیادی فرق هے کلام مقدس کے مطابق مسیحیت کے درمیان اور زیاده تر "مسیحی"بدعتی مسالک کے درمیان۔ کیا نجات صرف ایمان کے ذریعے هے، یا ایمان کے ساتھ عمل بھی؟ کیا میں صرف یسوع پر ایمان لانے سے نجات پا سکتا هوں، یا پھر کیا میں یسوع پر ایمان رکھوں اور اچھے کام بھی کروں؟

سوال صرف ایمان یا ایمان کے ساتھ عمل اس وقت مشکل هو جاتا ہے جب اس کو کلامِ مقدس کے ساتھ ملانے کی کوشش کی جائے۔ موازنه کریں رومیوں3باب28آیت، 5باب1آیت اور گلتیوں3باب24آیت کے ساتھ یعقوب2باب24آیت۔ کچھ فرق هے جیسے پولوس ﴿نجات صرف ایمان سے هے﴾اور یعقوب ﴿نجات ایمان اور عمل سے هے﴾۔ حقیقت میں ، پولوس اور یعقوب مکمل طور پر ایک دوسرے سے نامتفق نهیں۔ صرف ایک نقطه هے نااتفاقی کا که کچھ لوگ ایمان اور عمل کے اس تعلق کے درمیان فرق کو بڑھا چڑھا کربیان کرتے هیں۔ پولوس اپنی رائے میں صرف ایمان هی کو واجب گردانتا هے﴿افسیوں2باب8تا9آیت﴾ جبکه یعقوب ایمان کے ساتھ عمل کی حمایت کرتا نظر آتا هے۔ اس نمایاں مسئلے کا حل اس کی پڑتال کرنے سے ملتا هے که حقیقت میں یعقوب کس کے بارے میں بات کر رها هے ۔ یعقوب اس نظریے کو جھوٹا ثابت کررها هے جو شخص ایمان تو رکھتا هے لیکن اس میں کچھ اچھے اعمال نهیں﴿یعقوب2باب17تا 18آیت﴾۔ یعقوب اس نقطه پر زور دے رها هے که مسیح پر اصل ایمان اچھے اعمال کو پیدا کرتا هے﴿یعقوب 2باب20تا 26آیت﴾۔ یعقوب یه نهیں کهه رها که ایمان کے ذریعے عمل کا جواز پیش کیا جائے، لیکن اس کے برعکس وه شخص حقیقت میں سچا هے جو ایمان کے ذریعے اپنی زندگی میں اچھے اعمال رکھتا هے۔ اگر کوئی شخص ایماندار هونے کا دعویٰ کرتا هے، لیکن اس کے زندگی میں اچھے اعمال نهیں تو پھر وه غالباً مسیح پر حقیقی ایمان نهیں رکھتا ﴿یعقوب 2باب14آیت، 17آیت، 20آیت، 26آیت﴾۔

پولوس بھی ایسے هی اپنی تحریروں میں کهتا هے۔ اچھے پھلدار ایماندار اپنی زندگیاں اس فهرست کے مطابق گزاریں جیسے گلتیوں5باب22تا 23آیت۔ ہمیں ایمان کے زریعے نجات ملتی ہے نہ کہ اعمال سےاِس آیت کے فوراً بعد ﴿افسیوں2باب8تا9آیت﴾، پولوس همیں خبردار کرتا هے که هم اچھے عمل کرنے کے لئے پیدا هوئے تھے ﴿افسیوں2باب10آیت﴾۔ پولوس امید رکھتا هے زیاده تبدیل شده زندگی کی جیسے یعقوب نے کها، "اس لیے اگر کوئی مسیح میں هے، تو وه نیا مخلوق هے۔ پرانی چیزیں جاتی رهیں۔ دیکھو وه نئی هوگئیں"﴿2۔کرنتھیوں5باب17﴾ یعقوب اور پولوس نجات کے لئے ایک دوسرے سے نامتفق نهیں هیں۔ وه دونوں ایک هی نقطه رکھتے هیں مختلف تناظر سے۔ پولوس سادگی سے زور دیتا تھا که صرف ایمان کے ذریعے جبکه یعقوب زور دیتا ہے که مسیح پر ایمان اچھے اعمال پیدا کرتا هے۔

اور بائبل مقدس کی تعلیمات کے مطابق ہم ایمان سے نجات پاتے ہیں اور اچھے کام اُس نجات کی شکر گزاری کے طور پر کرتے ہیں جو ہمیں مسیح یسوع کو اپنا نجات دہندہ قبول کرنے سے ملی۔ کیونکہ مسیح یسوع پر ایمان لانے کے بعد ہماری پرانی سوچیں، فکریں، خصلیتیں اور زندگی یکسرتبدیل ہو جاتی ہیں اور ہم ایک نئے انداز میں اپنی نئی زندگی کا آغاز کرتے ہیں اِسی لیے بائبل مقدس کی تعلیم اِسے نئی پیدائش کا نام دیتی ہے۔



واپس اردو زبان کے پہلے صفحے پر



كيا نجات صرف ايمان کے ذريعے هےياپھر ايمان كے ساتھ اعمال بھي ضروری ہیں؟