مسیحٰی دُنیاوی جائزہ کیا ہے ؟




سوال: مسیحٰی دُنیاوی جائزہ کیا ہے ؟

جواب:
ایک " دُنیاوی جائزہ" ایک مخصوص نکتہ نظر سے دُنیا کے قابلِ فہم مفہوم کا حوالہ دیتا ہے ، پھر ، ایک ،" مسیحی دُنیاوی جائزہ " مسیحی نکتہ نظر سے دُنیا کا ایک قابلِ فہم مفہوم ہے ۔ ایک شخص کا دُنیاوی جائزہ دُیا کے بارے میں اُس کے تمام عقائد کی ایک ہم آہنگ اُس کی " بڑی تصویر " ہے ۔ حقیقت کو سمجھنے کا اُس کا یہ طریقہ ہے ۔ ایک آدمی کا دُنیاوی جائزہ روز مرہ کے فیصلے کرنے کی بنیاد پر ہے اور تاہم یہ انتہائی اہم ہے ۔

ایک میز پر پڑا ہوا ایک سیب کئی لوگوں کو دکھائی دیتا ہے ۔ ایک پودوں کے علم کا ماہر سیب کو دیکھتا ہے اور اُس کی جماعت بندی کرتا ہے ۔ ایک فنکار ایک رُکی ہوئی زندگی کو دیکھتا ہے اور اِسے کاغذ پر بنا دیتا ہے ۔ ایک پنساری اس منافع بخش چیز کو دیکھتا ہے اور اِس کی تفصیل درج کرتا ہے ۔ ایہ بچہ دوپہر کا کھانا دیکھتا ہے اور اِسے کھا لیتا ہے ۔ ہم کیسے کسی بھی صورتحال پر نظر کر تے ہیں اِس کے زیرِ اثرہے کہ کیسے ہم دُنیا پر وسیع حد تک نظر رکھتے ہیں ۔ ہر دُنیاوی جائزہ ، مسیحٰ یا غیر مسیحٰی آخر کار ان تین سوالوں کی بابت بات کرتا ہے ۔

1۔ ہم کہاں سے آئے تھے ( اور ہم یہاں کیوں ہیں ؟)
2۔ دُنیا کے ساتھ کیا غلط ہو رہا ہے ؟
2 ۔ ہم کس طرح اِسے مستحکم بنا سکتے ہیں ؟

آج کل ایک مقبول دُنیاوی جائزہ فطرت پرستی ہے ۔ جو کہ اِس طرح کے تینوں سوالوں کے جواب دیتی ہے : 1 ) ہم کسی حقیقی مقصد کے بغیر فطرت کے اتفاقی عوامل کی پیداوار ہیں 2 ) ہم فطرت کا احترام نہیں کر تے جتنا ہمیں کرنا چاہیے ۔ 3) ہم حیاتیات کے علم اور تحفظ سے دُنیا کو بچا سکتے ہیں ۔ ایک فطرتی دُنیاوی جائزہ بہت سارے متعلقہ فلسفے پیدا کرتا ہے جیسا کہ اخلاقی ع؛اقیت ، نظریہ وجودیت، نتائجیت اور خیال پرستی۔

دوسری طرف ایک مسیحی دُنیاوی جائزہ بائبل کے مطابق تین سوالوں کے جواب دیتا ہے : 1 ) ہم دُنیا پر حکومت کرنے اور اِس کے ساتھ رفاقت کرنے کو تیارخدا کی مخلوق ہیں ( پیدائش 2 : 15 ، 1 : 27 ۔ 28 ) 2) ہم نے خدا کے خلاف گناہ کیا اور تمام دُنیا کو ایک لعنت کے زیر ِ اثر کر دیا ( پیدائش 3 باب ) 3) خدا بذاتِ خود دُنیا کو اپنے بیٹے یسوع مسیح کی قپربانی کے وسیلہ سے نجات دہا ہے ( پیدائش 3 : 15 ، لوقا 19 : 10 ) اور ایک دن مخلوق کو اُس کی پہلی کامل حالت میں بحال کرے گا ( یسعیاہ 65 : 17 ۔ 25 ) ایک مسیحی دُنیاوی جائزہ اخلاقی کاملیت ، معجزات ، انسانی عظمت اور نجات کے ممکن ہونے پر ایمان رکھھے کی طرف سے ہماری راہنمائی کرتا ہے ۔

یہ یاد رکھنا اہم ہے کہ ایک دُنیاوی جائزہ قابلِ فہم ہے ۔ یہ رقم سے لیکر اخلاقیات تک ، سیاست سے لیکر فن تک زندگی کے ہر پہلو وں کو اثر انداز کرتا ہے ۔ حقیقی مسیحیت کلیسیا کے استعمال کے لیے خیالات کے ایک بنڈل سے بڑھ کر ہے ۔ مسیحیت جیسا کہ بائبل میں سکھایا گیا ہے بذاتِ خود ایک دُنیاوی جائزہ ہے ۔ بائبل کبھی بھی ایک " مذہبی " اور ایک " آزا د خیال " زندگی کے درمیان امتیاز نہیں کر تی ہے ، یہاں پر صرف مسیحی زندگی ہی ہے ۔ یسوع بذاتِ خود دعویٰ کرتا ہے ، " راہ ، حق اور زندگی میں ہوں " ( یوحنا 14 : 6 ) اور ایسا کرنے میں ہمارا دُنیاوی جائزہ بن جاتا ہے ۔



واپس اردو زبان کے پہلے صفحے پر



مسیحٰی دُنیاوی جائزہ کیا ہے ؟