آخری وقت کے نشانات کیا ہیں ؟




سوال: آخری وقت کے نشانات کیا ہیں ؟

جواب:
متی 24 : 5 ۔ 8 ہمیں کچھ اہم اشارے دیتی ہے تاکہ ہم آخری وقت کی فہم تک پہنچ سکیں ، " کیونکہ بہتیرے میرے نام سے آؕئیں گے اور کہیں گے میں مسیح ہوں اور بہت سے لوگوں کو گمراہ کریں گے ۔ اور تُم لڑائیاں اور لڑائیوں کی افواہ سُنو ے ۔ خبردار گھبرا نہ جانا ! کیونکہ قوم پر قوم اور سلطنت پر سلطنت چڑھائی کرے گی اور جگہ جگہ کال پڑیں گے اور بھونچال آئیں گے ۔ جھوٹے مسیح میں اضافہ ، جنگ و جدل میں اضافہ ، کال میں اضافہ م بیماریوں اور قدرتی تباہ کاریوں میں اضافہ آخری وقت کے نشانات ہیں ۔ ا٘س پیرا گراف میں اگرچہ ہمیں خبردار کیا گیا ہے ۔ ہمیں دھوکہ نہیں کھانا ہو گا کیونکہ یہ صرف مصائب کا شروع ہے اور اختتام ابھی آنے والا ہے ۔ کچ مبلغین ہر بھونچال کو ، ہر سیاسی اُتار چڑھاو اور اسرائیل پر ہر حملہ کو ایک یقینی نشانکے طور پر نشاندہی کر تے ہیں کہ آخری وقت تیزی کے ساتھ آ رہا ہے ۔ جبکہ یہ واقعیا ت آخری دنوں تک کی رسائی کا اشارہ ہو سکتے ہیں ، یہ ضروری اشارے نہیں ہیں کہ آٰخری وقت آ چُکا ہے ۔ پولس رسول خبردار کرتا ہے کہ آخری دن غلط تعلیمات میں اضافے کا ایک نشان واضح کریں گے ۔ " لیکن روح صاف فرماتا ہے ک آئندہ زمانوں میں بعض لوگ گمراہ کرنے والی روحوں اور شیاطین کی تعلیم کی طرف متوجہ ہو کر ایمان سے بر گشتہ ہو جائیں گے ۔" ( 1 تیمتھیس 4 : 1 ) انسان ار لوگوں کی بُری خصوصیات میں اضافہ کی وجہ سے آخری دن " خطرے کے اوقات" کے طور پر بیان ہوئے ہیں جو کہ ہوشیاری کے ساتھ " سچائی کو رکھتے ہیں ۔" ( 2 تیمتھیس 3 : 1-9 ، 2 کرنتھیوں 2 : 3 بھی دیکھیں )

دوسرے ممکنہ نشانات میں یروشلم میں یہودی ہیکل کی دوبارہ تعمیر ، اسرائیل کی طرف بڑھتی ہوئی دُشمنی ، دُنیا میں ایک حکومت کی طرف پیش قدمی شامل ہوں گی ۔ تاہم آخری وقت کا سب سے نمایاں نشان قوم بنی اسرائیل ہے ۔ 1948ء میں اسرائیل ایک آزاد مملکت کے طور پر مان لیا گیا ، بنیاری طور پر 70 بعد از مسیح کے پہلی دفعہ ایسا ہوا ہے ۔ خا نے ابراہام سے عہد کیا کہ اُس کی نسل کعنان کا مُلک " ایک ( دائمی ملکیت ) کے طور پر لے گی ( پیدائش 17 : 8 ) اور حزقی ایل نے اسرائیل کی جسمانی اور روحانی طور پر دوبارہ جی اُٹھنے کی پیشن گوئی کی ( حزقی ایل 37 باب ) اسرائیل کا اپنے وطن میں ایک قوم کی طرح آباد ہونا اسرائیل کی یومِ حساب میں اہمیت آخری وقت کی نبوت کی روشنی میں ٹھیک ہے ( دانی ایل 11 : 41 ، 10 : 14 ۔ مکاشفہ 11 : 8 )

اِن نشانات کو ذہن نشین کرنےکے ساتھ ہم آخری وقت کی توقعات کے بارے میں عقل اور فہم فراست حاصل کر سکتے ہیں ۔ تاہم ، ہمیں ان واقعیات میں سے کسی ایک کو جلد آنے والے آخری وقت کے واضح نشان کے طور پر وضاحت نہیں کرنی چاہیے ۔ خدا ہمیں کافی معلومات دے چُکا ہے کہ ہم تیاری کر سکتے ہیں اور وہ یہ ہے جسے ہم بیان کرنے والے ہیں ۔



واپس اردو زبان کے پہلے صفحے پر



آخری وقت کے نشانات کیا ہیں ؟