مشت زني كيا يه كلامِ مقدس كے مطابق گناه هے؟




سوال: مشت زني كيا يه كلامِ مقدس كے مطابق گناه هے؟

جواب:
کلامِ مقدس میں خاص طور پر مشت زنی کا ذکر نهیں اور نه یه بیان کیاگیا هے که مشت زنی کرنا گناه هے۔ نه هی کوئی سوال هے، پھر بھی، لیکن جیسے مشت زنی کرنے کے لئے عمل کیے جاتے هیں وه گناه هیں۔ مشت زنی کرنا شهوت سے بھرے خیالات کا آخری نتیجه هے، جنسی جذبات کو ابھارنا، اور یا فحش تصاویر۔ یه وه مشکلات هیں جن سے روکنے کی ضرورت هے۔ اگر شهوت اور جنسی طور پر ابھارنے والی چیزوں کو ترک کیا جائے اور ان پر قابو پایا جائے تو مشت زنی کا مسئله کوئی مسئله نهیں هوگا۔

مقدس صحائف میں اونان کے بارے میں پیدائش ۳۸ باب کی ۹ اور ۱۰ آیت میں ایک واقع بیان کیا گیا ہے۔ اور کچھ لوگ اس بات کی تشریح یوں کرتے ہیں کہ اپنے نطفہ کو زمین پر گرا دینا گناہ ہے۔ کچھ بھی ہو، یہ درست نہیں کہ کلام کا یہ حصہ ہمیں کیا فرماتا ہے۔ یہ حصہ ہمیں بتاتا ہے کہ خدا نے اونان کو ملامت کی اِس وجہ سے نہیں کہ وہ اپنا نطفہ زمین پر گرایا تھا۔ بلکہ اِس وجہ سے کہ اُس نے کوتاہی کی تھی اپنی زمہ داری کو سرانجام دینے میں، جو کہ ایک بھائی ہونے کے ناطے اُس پر فرض تھی۔ کلام کا یہ حصہ مشت زنی سے متعلق نہیں ہے۔بلکہ خاندانی زمہ داری میں کوتاہی سے متعلق ہے۔

اور دوسرا کلام کا حصہ جو ثبوت کے طور پر پیش کیا جاتا ہےمشت زنی ایک گناہ ہے وہ ہے مقدس متی کی انجیل ۵باب اور ۲۷ تا ۳۰ آیات تک ۔ جس میں مسیح یسوع برُی خواہشات سے بھری سوچ سے کے متعلق فرماتے ہے کہ۔ "تم سن چکے ہو کہ کہا گیا تھا کہ زنا نہ کرنا۔ میں تم سے یہ کہتا ہوں کہ جس کسی نے بُری خواہش سے کسی عورت پر نگاہ کہ وہ اپنے دل میں اُسکے ساتھ زِنا کر چکا۔ ۔۔۔۔۔۔۔ اور اگر تیرا دہنا ہاتھ تجھے ٹھوکر کہلائے تو اُسکو کاٹکر اپنے پاس سے پھینک دے کیونکہ تیرے لیے یہی بہتر ہے۔" تو بھی کلام کے اِس حصہ میں بہت واضع فرق نظرا ٓتا ہے کہ یہ مشت زنی سے متعلق نہیں ہے۔ تو بھی یہ مشت زنی کی طرف ہلکا ساآشارہ تو ہو سکتا ہے۔ لیکن واضع مشت زنی کے بارے میں نہیں۔

تو بھی کلام مقدس غیر مبہم طور پر یہ فرماتا ہے کہ مشت زنی گناہ ہے، اوریہ ضروری نہیں ہے کہ کوئی عمل برائے راست ہماری رہنمائی نہیں کرتا کہ مشت زنی گناہ ہے تو بھی بائبل مقدس میں یہ واضع طور پر بتا یا گیا ہے کہ مشت زنی بُری خواہشات کی پیداوا ر ہے اورساتھ ہی ساتھ جنسی بدکرداری اور گندی تصوریریں دیکھنا بھی گناہ کے زمرے میں آتا ہے۔ اور اگر خواہش کا گناہ، اور غیر اخلاقی سوچ اور فحاش نگاری انسان پر حاوی ہو جاتے ہیں تو پھر مشت زنی خود بخود اپنی جگہ بنالے گی۔ اور بہت سارے لوگ اپنے آپ کو قصور وار تصور کرتے ہیں جب وہ مشت زنی کے گناہ میں ملوث ہوتے ہیں۔ تو اُن کا یہی عمل اُن کی توبہ کی طرف رہنمائی کرتا ہے۔

کلامِ مقدس همیں بتاتا هے که جنسی بدکرداری کی موجودگی سے بھی بچنا هے ﴿افیسوں5باب3آیت﴾۔ "اور تمارے درمیان حرامکاری اور کسی طرح کی ناپاکی کا ذکر تک بھی نہ ہو۔ اور نہ ہی کسی قسم کی ناپاکی تمارے درمیان پائی جائے"۔ میں نے نهیں دیکھا کے کتنے مشت زنی کرنے والوں کے یه امتحان پاس کیا هے۔ کسی وقت ایک اچھی جانچ که کوئی چیز گناه هے یا نهیں آپ دوسروں کوبڑے فخر سے بتائیں گے که آپ نے کیا کیا۔اگر ایسی کسی چیز کے بارے میں دوسروں کو پته چلے جس سے آپ پریشان هوں یا شرمنده هو، یه بهت ممکن هے که یه گناه هے۔ ایک دوسرا امتحان اس کو ایمانداری سے جانچنے کا یه هے، سچے دل سے، خدا سے یه کهیں که وه آپ کو برکت دے اور اپنے کام کے لئے اچھے مقصد کے لئے استعمال کریں۔ میں ایسے نهیں سوچتا که مشت زنی کوئی ایسا کام هے جس پر هم "فخر"کر سکیں یا حقیقی طور پر خدا کا شکر ادا کریں۔

کلامِ مقدس همیں تعلیم دیتاهے ، "پس تم کھاؤ یا پیو یا جو کچھ کرو سب خدا کے جلال کے لئے کرو"﴿1۔کرنتھیوں10باب31آیت﴾۔ اگر یهاں شک کی کوئی جگه هے که اس سے خدا خوش هوتا هے، تو پھر یه اچھا هے که اسے ترک کردیا جائے۔ مشت زنی کے بارے میں یهاں شک کی گنجائش هے۔ " جو کچھ اعتقاد سے نهیں وه گناه هے"﴿رومیوں14باب23﴾۔ مجھے نهیں پته کے کیسے، کلامِ مقدس کے مطابق ، مشت زنی سے خدا کی تمجید هوتی هے۔ مزید، همیں یه یاد رکھنے کی ضرورت هے که همارے جسم ، هماری روحیںنجات پا چکی هیں اور خدا کی ملکیت هیں۔ "کیا تم نهیں جانتے کے تمهارا بدن روح القدس کا مقدس هے جو تم میں بسا هوا هے اور تم کو خدا کی طرف سے ملا هے؟ اور تم اپنے نهیں ۔ کیونکه قیمت سے خریدے گئے هو۔ پس اپنے بدن سے خدا کا جلال ظاهر کرو"﴿1۔کرنتھیوں6باب19تا20آیت﴾۔ یه عظیم سچ همیں برداشت کرنا هوگا که هم کیا کرتے هیں اور اپنے بدنوں کے ساتھ کهاں جائیں گے۔ پس، ان اصولوں کی روشنی میں ، میں یقینی طور پر کهتا هوں کی مشت زنی کرنا کلا مِ مقدس کے مطابق گناه هے۔ میں یقین نهیں کرتاکه مشت زنی کرنا خدا کو خوش کرتا هے، بدکرداری کی موجودگی سے بچیں، یا آزمائش میں پورے اتریں تاکه خدا همارے جسموں پر ملکیت رکھے



واپس اردو زبان کے پہلے صفحے پر



مشت زني كيا يه كلامِ مقدس كے مطابق گناه هے؟