کیوں خدا بُری چیزوں کو اچھے لوگوں کے لیے رونما ہونے کی اجازت دیتا ہے؟




سوال: کیوں خدا بُری چیزوں کو اچھے لوگوں کے لیے رونما ہونے کی اجازت دیتا ہے؟

جواب:
یہ پوری الہیات میں سب سے مُشکل سوالات میں سے ایک ہے ۔ خداوند ابدی ، غیر فانی ، ہر چیز پر قادر ،ہر جگہ موجود ، اور قادرِ مطلق ہے ۔ کیوں انسانی مخلوقات کو(ابدی، غیر فانی ، ہر چیز پر قادر، ہر جگہ موجو د یا قادرِ مطلق نہ ہوتے ہوئے) خدا کی راہوں کو پوری طرح سمجھنے کے قابل چشم براہ ہونا چاہیے ؟ایوب کی کتاب اِس معاملہ پر بحث کر تی ہے ۔ خدا نے شیطان کو ہر چیز کرنے کی اجازت دی جو وہ کرنا چاہتا تھا ماسوائے اُسے مارنے کے۔ ایوب کا ردِ عمل کیا تھا؟ اگرچہ وہ مجھے قتل کرے گا ، میں انتظار نہیں کرونگا " ( ایوب 13 : 15 )۔ " خداوند نے دیا اور خداوند نے لے لیا ۔ خداوند کا نام مبارک ہو ( ایوب 1 : 21 )۔ ایوب نے اِسے نہ سمجھا کہ کیوں خدا نے اِن چیزوں کی اجازت دی جو اُس نے کیں ، لیکن وہ جانتا تھا کہ خدا اچھا تھا اور اِسی لیے اُس نے اُس پر بھروسہ کرنا جاری رکھا۔ آخر کار ، اِسی طرح ہمارا ردِ عمل بھی ہونا چاہیے ۔

کیوں بُری چیزیں اچھے لوگوں کے لیے رونما ہو تی ہیں ؟ بائبل کا جواب یہ ہے کہ یہاں نیک( اچھے) لوگ نہیں ہیں ۔ بائبل اِسے بکثرت طور پر واضح کر تی ہے کہ ہم سب گناہ سے آلودہ اور متاثر ہیں ( واعظ 7 : 20 ، رومیوں6 :23 ، 1 یوحنا1 : 8 ) رومیوں3 : 10۔ 18 " اچھے لوگوں" کے وجود نہ رکھنے کے بارے واضح نہیں ہو سکتیں : " کوئی راستباز نہیں ۔ ایک بھی نہیں ۔ کوئی سمجھدار نہیں ۔ کوئی خدا کا طالب نہیں ۔ سب گمراہ ہیں سب کے سب نکمے بن گئے۔ کوئی بھلائی کرنے والا نہیں ۔ ایک بھی نہیں ۔ اُنکا گلا کھُلی پوئی قبر ہے ۔ اُنہوں نے اپنی زبانوں سے فریب دیا ، اُن کے پونٹوں میں سانپوں کا زہر ہے ۔ اُن کا منہ لعنت اور کڑواہٹ سے بھرا ہے ۔ اُن کے قدم خون بہانے کے لیے تیز رو ہیں ۔ اُن کی راہوں میں تباہی اور بد حالی ہے۔ اور وہ سلامتی کی راہ سے واقف نہ ہوئے۔ اُنکی آنکھوں میں خدا کا خوف نہیں ۔" اِس سیارے زمین پر ہر انسانی مخلوق اِس ہر لمحہ جہنم میں پھینکے جانے کی مستحق ہے۔ ہر سیکنڈ جسے ہم زندہ رہنے کے لیے صَرف کرتے ہیں کہ صرف خداوند کے فضل اور رحم کی بدولت ہے ۔ یہاں تک کہ بہت خطرناک تباہی جس کا ہم اِس زمین پر تجربہ کر سکتے ہیں یہ اُس کے موازنہ کر تے ہوئے رحیم ہے جس کے ہم حقدار ہیں ، آگ کی جھیل میں ابدی جہنم کے ۔

بہتر سوال اِس طرح ہونا چاہیے تھا کہ" کیوں خداوند اچھی چیزوں کو بُرے لوگوں کے لیے رونما ہونے کی اجازت دیتا ہے ؟ " رومیوں5: 8 بیان کرتی ہے ،" لیکن خدا اپنی محبت کی خوبی ہم پر یوں ظاہر کرتا ہے کہ جب ہم گنہگار ہی تھے تو مسیح ہماری خاطر موا۔" اِس دُنیا کے لوگوں کی گناہ آلود، بدکار ، بُری فطرت کے باوجود خدا پھر بھی ہم سے محبت کرتا ہے۔ اُس نے ہم سے ایسی محبت رکھی کے ہمارے گناہوں کی ادائگی کے لیے مُوا ۔ ( رومیوں6 : 23 ) ۔ اگر ہم یسوع مسیح کو نجات دہندہ کے طور پر حاصل کر تے ہیں ( یوحنا3 : 16 ، رومیوں10: 9 )، ہم معاف کیے جائیں گے اور وعدہ کیے گئے ابدی آسمانی گھر میں ہونگے ( رومیوں 8 : 1 ) ۔ جس کے ہم مستحق ہیں یہ جہنم ہے ۔ جو ہمیں آسمان میں دیا جاتا ہے یہ ابدی زندگی ہے اگر ہم ایمان کے ساتھ مسیح کے پاس آتے ہیں ۔

جی ہاں ، بعض اوقات بُری چیزیں اُن لوگوں کے ساتھ واقع ہوتی ہیں جو اپنی نالائقی کے طور پر دکھائی دیتے ہیں ۔ لیکن خدا اپنے مقاصد کے لیے چیزوں کو واقع ہونے کی اجازت دیا ہے ، خواہ ہم اُنہیں سمجھتے ہیں یا نہیں ۔ بہر حال ، مندرجہ بالا سب کچھ ، جو ہمیں لازما ً یاد رکھنا ہے یہ کہ خدا نیک ( اچھا) ، راست ، محبت کرنے والا ، اور رحیم ہے ۔ اکثر چیزیں ہمارے لیے رونما ہو تی ہیں جنہیں ہم سادہ طرح سمجھ نہیں سکتے ۔ بہر حال ، خدا کی اچھائی پر شک کرنے کی بجائے ، ہمارا ردِ عمل اُس پر بھروسہ رکھنے کا ہونا چاہیے ۔ " سارے دل سے خداوند پر توکل کر اور اپنے فہم پر تکیہ نہ کر ۔ اپنی سب راہوں میں اُسکو پہچان اور وہ تیری راہنمائی کرے گا " (امثال 3 : 5 ۔ 6 )۔



واپس اردو زبان کے پہلے صفحے پر



کیوں خدا بُری چیزوں کو اچھے لوگوں کے لیے رونما ہونے کی اجازت دیتا ہے؟